باٹا پور، لاپتہ رشید کا اغوا جھوٹ نکلا، بیوی اور بہنوئی نے پھندہ دیکر لاش بہا دی، اعتراف جرم

باٹا پور، لاپتہ رشید کا اغوا جھوٹ نکلا، بیوی اور بہنوئی نے پھندہ دیکر لاش بہا ...
باٹا پور، لاپتہ رشید کا اغوا جھوٹ نکلا، بیوی اور بہنوئی نے پھندہ دیکر لاش بہا دی، اعتراف جرم

  

لاہور (کر ائم سیل )باٹاپور کے علاقہ میں شہری کے اغواء کا معمہ حل،بیوی نے آشناء کے ساتھ ملک کر قتل کر نے کے بعد لاش نہر میں بہا دی۔پولیس نے ملزمان کوحراست میں لیا تو انہوں نے عترف جرم کر لیا۔تفصیلات کے مطابق ملزم محمد اکرم کے بھتیجوں کی شادی نروڑ گاؤں میں ہوئی تھی جس کی وجہ سے ملزم کا یہاں اکثر آنا جانا رہتا تھا وہیں ملزم کی ملاقات رضیہ سے ہوئی اور وہ اسے پسند کرنے لگا ۔رضیہ کے والدین غریب تھے لہذا کرم نے رضیہ کی شادی اپنے سالے مقتول عبدالرشید سے کروادی اور شادی کے بعد مقتول اور اس کی بیوی کو اپنے گھر لے آیا اس دوران اکرم اور رضیہ کے آپس میں تعلقات قائم ہو گئے۔ ایک روز اکرم نے اپنے سالے عبدالرشید سے کہاکہ وہ اپنی بیوی رضیہ کو اس کے میکے لے جائے ۔ عبدالرشید جب اپنی بیوی کے ہمراہ جلو موڑ کے قریب پہنچا تو ملزم اکرم طے شدہ پلان کے مطابق پہلے ہی وہاں موجود تھاجو بہانے سے ان دونوں کو بی آر بی نہر کے قریب لے گیا وہاں پہنچ کراکرم نے رضیہ کے دوپٹے کی مدد سے اسے پھندہ دیکر مار ڈالااور اس کی لاش بی آر بی نہر میں پھینک دی ۔ وہاں سے اکرم اپنے گھرآگیااور رضیہ اپنے میکے کو چلی گئی اور جا کے بتایا کہ رشید اسے چوڑیوں کی دکان میں چھوڑ کر خود آئس کریم لینے گیا لیکن واپس نہیں آیا۔ اہل خانہ تلاش کرتے رہے ۔بالآخرعبدالرشید کا بھائی شاہد ملائشیا سے پاکستان آیا اور اس کے اغوا کا مقدمہ درج کروایا۔پولیس نے اکرم اور رضیہ بی بی حراست میں لیا تو انہوں نے سچ اگل دیا۔تفتیش سے معلوم ہوا کہ مقتول کی والدہ کو اکرم اور رضیہ کے تعلقات کا پہلے سے ہی علم تھا اور اسی بنا پر پولیس نے دونوں کو شک کی بنا پر حراست میں لیا تھا۔

مزید : علاقائی