محبوبہ نے وعدہ توڑ کر کسی اور کے ساتھ گھر بسالیا، اس کے بعد بپھرے عاشق نے ایسی شرمناک حرکت کر ڈالی کہ لڑکی کی زندگی بربادی کردی

محبوبہ نے وعدہ توڑ کر کسی اور کے ساتھ گھر بسالیا، اس کے بعد بپھرے عاشق نے ایسی ...
محبوبہ نے وعدہ توڑ کر کسی اور کے ساتھ گھر بسالیا، اس کے بعد بپھرے عاشق نے ایسی شرمناک حرکت کر ڈالی کہ لڑکی کی زندگی بربادی کردی

  

کولمبو (نیوز ڈیسک) سری لنکن پولیس نے ایک لڑکی کو جنسی زیادتی کا نشانہ بنانے اور اس کی برہنہ تصاویر انٹرنیٹ پر اپ لوڈ کرنے کے الزام میں ایک مقامی نوجوان کو گرفتار کرلیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق لڑکی کی جانب سے درج کرائی گئی رپورٹ میں اس کا موقف ہے کہ ملزم سے اس کی دوستی 2013ء میں ہوئی، دونوں ایک ہی یونیورسٹی کے طالب علم تھے اور وقت کے ساتھ ساتھ دونوں کی دوستی ’پیار‘ میں بدل گئی تاہم پھر لڑکی نے نوجوان سے قطع تعلق کرکے جنوری 2015ء میں اپنے والدین کی رضامندی سے کسی اور سے شادی کرلی۔ بس پھر دلبرداشتہ محبوب نے اس کی زندگی عذاب بنانے کی ٹھان لی۔

لڑکی کے مطابق وہ ’انورادھا پورہ ٹیچنگ ہسپتال‘ میں انٹرن شپ کررہی تھی کہ ایک دن ملزم اسے زبردستی علاقے میں قائم ایک ہوٹل کے کمرے میں لے گیا۔ وہاں اسے زیادتی کا نشانہ بنانے کے بعد زبردستی اس کی برہنہ تصاویر بنائیں۔ اس کے بعد بھی دھمکیوں کا سلسلہ بند نہ ہوا اور اپریل 2015ء میں ملزم نے چند تصاویر انٹرنیٹ پر ڈال دیں۔ نوجوان کا مطالبہ تھا کہ لڑکی اپنے شوہر کو چھوڑ کر اس سے تعلقات قائم کرلے۔ سری لنکن کرائم انویسٹی گیشن محکمے نے نوجوان کو حراست میں لے کر تفتیش شروع کردی ہے۔

مزید : ڈیلی بائیٹس