لڑکی کی چھپ کر ویڈیو بنانے والا 15 سالہ لڑکا نفسیاتی ہسپتال منتقل

لڑکی کی چھپ کر ویڈیو بنانے والا 15 سالہ لڑکا نفسیاتی ہسپتال منتقل

کولمبو (مانیٹرنگ ڈیسک) سری لنکا کے صوبے نیگومبو کے وزیر اعلیٰ روچیرا ویلی واٹا نے ایک 15 سالہ لڑکے کو 22 سالہ لڑکی کی نہاتے ہوئے چھپ کر ویڈیو بنانے پر نفسیاتی ہسپتال میں رکھنے کا حکم دے دیا ہے۔

ایمریٹس 24/7 کے مطابق ملزم تھساری گاسکا ٹووا کے علاقے کا رہائشی ہے اور اس نے یہ معمول بنا رکھا تھا کہ وہ متاثرہ لڑکی پر نظر رکھتا تھا اور جب بھی وہ نہانے کیلئے غسل خانے میں داخل ہوتی وہ اپنا مکروہ کام شروع کردیتا اور روزانہ اس کی ویڈیو بناتا تھا۔ویڈیو بنانے کے بعد لڑکا دوسرے لوگوں کو بھی لڑکی کی ویڈیو دکھاتا تھا جس پر پورے علاقے میں بات پھیل گئی اور لڑکی کی ماں کو بھی پتا چل گیا ۔ اس دوران لڑکی کی ماں نے لڑکے کو پکڑنے کیلئے جال تیار کرنا شروع کردیا۔

آدمی کو ٹرک کی ٹکر، خاتون صحافی موقع پر پہنچ گئی لیکن زخمی کی مدد کی بجائے اس سے لائیو پروگرام پر ایسا سوال پوچھنے میں لگ گئی کہ دنیا میں ہنگامہ برپاہوگیا، لیکن پھر کیا ہوا۔۔۔۔؟ جان کر آپ پاکستانی میڈیا کی حرکتیں بھی بھول جائیں گے

ماں نے اپنی بیٹی کو کہا کہ وہ نہانے کیلئے غسل خانے جائے اور وہ خود باہر چھپ کر بیٹھ گئی ۔ لڑکی کے غسل خانے میں داخل ہوتے ہی ملزم ایک پائپ کے سہارے غسل خانے کی کھڑکی تک پہنچا اور ویڈیو ریکارڈ کرنا شروع کردی۔ اس دوران لڑکی کی ماں نے ملزم کو رنگے ہاتھوں پکڑ کر پولیس کے حوالے کردیا۔عدالت نے ملزم کے نفسیاتی جائزہ کی رپورٹ اگلی سماعت پر پیش کرنے کا حکم دے دیا ہے۔

مزید : جرم و انصاف