رواں مالی سال چاول کی برآمدات میں 8.60 فیصد کمی ہوئی

رواں مالی سال چاول کی برآمدات میں 8.60 فیصد کمی ہوئی

اسلام آباد (اے پی پی) پاکستان بزنس مین اینڈ انٹلیکچولز فور م کے صدرمیاں زاہد حسین نے کہا ہے کہ رواں مالی سال میں چاول کی برامدات میں 8.60 فیصد کمی آئی ہے جس کی وجہ سے آمدنی 2.035 ارب ڈالر رہی ہے، 2015میں 4,262,216 میٹرک ٹن چاول برامد کیا گیا جو 2016 میں 3,861,406 میٹرک ٹن رہ گیا ہے جس کا فوری نوٹس لیا جائے اور برامدات کو سہارا دینے کیلئے حکومت فوری مداخلت کرے۔۔ پیر کویہاں جاری بیان میں انہوں نے کہا کہ 2009-10 میں چاول کی برامد سے 2.2 ارب ڈالر کمائے گئے تھے جس کے بعد سے برامدات کا ہدف حاصل نہیں کیا جا سکا ، 2010 کے بعد برامدات جامد رہیں مگر اب تیزی سے گر رہی ہیں اسلئے موجودہ صورتحال میں حکومت کی مداخلت ضروری ہو گئی ہے کیونکہ چاول کے بہت سے کاشتکار دوسری فصلیں اگا رہے ہیں ۔انھوں نے کہا کہ چاول کے تمام سٹیک ہولڈرز کو مراعات دی جائیں جس میں کسان، تاجر، رائس ملز مالکان اور برامدکنندگان شامل ہیں۔

انھوں نے کہا کہ حکومت چاول کے کاشتکاروں کو وہی سہولیات دے جو دیگر ممالک اپنے کسانوں کو دے رہے ہیں جس میں سستے بیج، سستی ادویات، سستی بجلی اور وافرپانی شامل ہیں ورنہ یہ اہم شعبہ مسابقت کے صلاحیت کھو دیگا۔ انھوں نے مطالبہ کیا کہ چاول کے کاشتکاروں کو بلواسطہ زرتلافی دینے کے بجائے براہ راست سبسڈی دی جائے اس سے پیداوار پر مثبت اثرات مرتب ہوں گے ۔

مزید : کامرس