ایوان عدل کے باہر بے ہنگم پارکنگ ،ٹریفک جام رہنا معمول بن گیا

ایوان عدل کے باہر بے ہنگم پارکنگ ،ٹریفک جام رہنا معمول بن گیا

لاہور(کامران مغل)ایوان عدل اورایل ڈی اے کمپلیکس کے باہرٹریفک گھمبیرصورتحال اختیارکرچکی ہے،شدید گرمی میں جگہ جگہ موٹر سائیکل اورگاڑیاں کھڑی ہونے سے گھنٹوں ٹریفک جام رہنا معمول بن گیا ہے ،ٹریفک میں پھنسے شہری شدید گرمی کے باعث ذہنی مریض بننے لگے ہیں۔ وکلاء سمیت سائلین نے عدالتوں کی سکیورٹی کی صورتحال کوبھی انتہائی ناقص قرار دیتے ہوئے غیرتسلی بخش قراردیا ہے ،سب کچھ جانتے ہوئے بھی حکام بالا خاموش تماشائی بنے بیٹھے ہیں۔تفصیلات کے مطابق ایوان عدل میں روزانہ ہزاروں کی تعداد میں سائلین اور وکلا ء کیسوں کی پیروی کے لئے پیش ہوتے ہیں۔ایوان عدل اورایل ڈی اے کمپلیکس میں پارکنگ کا مناسب انتظام نہ ہونے کی وجہ سے سائلین اور وکلا اپنی موٹرسائیکلیں اور گاڑیاں سڑک کے چاروں طرف کھڑی کرکے عدالتوں میں چلے جاتے ہیں جس کی وجہ سے ایوان عدل اور ایل ڈی اے کمپلیکس کے باہر ٹریفک سارا سارا دن جام رہتی ہے۔ بعض اوقات چاروں اطراف میں موٹرسائیکل اور گاڑیاں کھڑی ہونے سے سائلین عدالتوں تک نہیں پہنچ پاتے اور ان کے کیسوں میں اگلی تاریخیں پڑ جاتی ہیں۔عدالتوں میں پیش ہونے والے وکلا ء وسائلین ناصر،علی احمد، کاشف بھٹی ،حسیب اسامہ کاکہنا ہے کہ ٹریفک جام ہونے کی وجہ سے ان کو سخت مشکلات کا سامنا رہتا ہے ،گھنٹوں تک ٹریفک جام رہنا معمول بن چکاہے ، منٹوں کا سفر اب گھنٹوں میں طے کرنا پڑتا ہے جبکہ لاہور بار کے سیکرٹری شاہد نواب چیمہ ایڈووکیٹ کا کہنا ہے کہ انہوں نے انتظامیہ کو کئی بار ٹریفک کے مسئلے کو حل کرانے کے لئے تجاویز دی ہیں لیکن اس پر عمل درآمد نہیں ہواجس پر باعث ٹریفک کے مسائل کا سامان کرنا پڑرہا ہے تاہم وہ انتظامیہ سے مطالبہ کرتے ہیں ٹریفک کے گھمبیر مسلے کو فوری حل کیا جائے تاکہ وکلاء اور دیگر افراد کو درپیش مشکلات میں کمی آسکے۔انہوں نے مزید کہا کہ ایل ڈی اے کمپلیکس میں پارکنگ کے ساتھ ساتھ سیکورٹی بھی موجود نہیں ہے جس کے باعث کسی بھی وقت ناخوشگوار واقع رونما ہوسکتا ہے لہذا سیکیورٹی کے انتظامات کو بھی بہتر بنانے کے لئے حکام بالا کو اقدامات کرناچاہیے۔

مزید : میٹروپولیٹن 1