بچوں کی گمشدگی کے واقعات سے نمٹنے کیلئے ہر ممکن اقدامات کر رہے ہیں، صباء صادق

بچوں کی گمشدگی کے واقعات سے نمٹنے کیلئے ہر ممکن اقدامات کر رہے ہیں، صباء صادق

لاہور( لیڈی رپورٹر)چیئر پرسن چائلڈ پروٹیکشن بیورو صباصادق نے کہا ہے کہ بچوں کی گمشدگی کے واقعات سے نمٹنے کے لئے اور بچوں کے تحفظ کو یقینی بنانے کیلئے وزیرِ اعلیٰ پنجاب کی خصوصی ہدایات پرحکومتِ پنجاب ہر ممکن اقدامات کر رہی ہے۔ حکومت کیساتھ ساتھ یہ معاشرے کے افراد اور والدین کی اولین ذمہ داری ہے کہ وہ بچوں کے تحفظ کو یقینی بنائیں۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے گزشتہ روز چائلڈ پروٹیکشن اینڈ ویلفیئر بیورو(CPWB) کے دفتر میں گمشدہ اور گھر سے بھاگے بچوں کی والدین کے حوالے کرنے کے موقع پر پریس بریفنگ کے دوران کیا۔انھوں نے مزید کہا کہ محکمہ داخلہ پنجاب اور محکمہ پولیس پنجاب اس سلسلے میں مشترکہ طور پر پیش رفت کر رہی ہے۔اس سلسلے میں CPWB کے فیملی ٹریسنگ سیکشن نے ہر ممکن کوشش کرتے ہوئے گھر سے بھاگے ہوئے تین بچوں حسن شفیق (سیالکوٹ)، اسماعیل غفور (کوہاٹ) اور زین افتخار (چیچہ وطنی) کو انکے خاندان سے ملوادیا۔حسن شفیق سیالکوٹ سے بھاگ کر لاہور آگیا اور اس کے والدین نے تھانہ رنگپور سیالکوٹ میں بچے کے اغواء کی ایف آئی آر درج کر وائی۔ اسماعیل ولد غفور کوہاٹ سے اپنے بڑے بھائی کے ساتھ لڑائی کرنے کے بعد گھر سے بھاگ کر لاہور آگیا اور اس کو چائلڈ پروٹیکشن بیورو کے ریلوے سٹیشن لاہور پر قائم اوپن ریسیپشن سینٹر سے تحویل میں لیا گیا اور فیملی ٹریسنگ ٹیم نے معلومات کی روشنی میں بچے کے والدین کو کوہاٹ میں رابطہ کیا جس پر بچے کے والد نے چائلڈ پروٹیکشن بیورو لاہور میں آکر بچے کو تحویل میں لیا۔ چیچہ وطنی کا رہائشی زین افتخار مدرسے میں پڑھتا تھا اور استاد کی مار سے بھاگ کر لاہور آگیا جہاں بیورو کی ٹیم نے بچے کو تحویل میں لینے کے بعد اس کے والدین کو تلاش کیا اور بچے کو اس کی والدہ کے حوالے کیا ۔اس بچے کی بھی اغواء کی رپورٹ درج کروائی گئی تھی۔یہ تینوں بچے گھروں سے بھاگ کر لاہور پہنچے اورچائلڈ پروٹیکشن اینڈ ویلفیئر بیورو کے اوپن ریسیپشن سنٹرز (ORCs) کے ذریعے حفاظتی تحویل میں لئے گئے تھے۔ مزید برآں ان بچوں کی گمشدگی سے متعلق ان کے والدین نے اغواء کی رپورٹ درج کروائی تھی۔چےئر پرسن،چائلڈ پروٹیکشن اینڈ ویلفیئر بیورو نے میڈیا کے سامنے ان بچوں سے متعلق معلومات فراہم کرتے ہوئے کہا کہ چائلڈ پروٹیکشن اینڈ ویلفیئر بیور و اور محکمہ پولیس گمشدہ بچوں کی تلاش کیلئے ہر ممکن کوشش کو بروئے کار لارہی ہے۔اس سلسلے میں پرائیویٹ این جی اوز اوربچوں کیلئے قائم شیلٹر ہوم سے بھی گمشدہ اور لاوارث بچوں کا ڈیٹا حاصل کیا جا رہا ہے تاکہ ان بچوں کے والدین کو تلاش کیا جا سکے۔

مزید : میٹروپولیٹن 1