بھارت جمہوریت کے پیرہن میں چھپا ہو ا کشمیری عوام کا قاتل ہے ،برجیس طاہر

بھارت جمہوریت کے پیرہن میں چھپا ہو ا کشمیری عوام کا قاتل ہے ،برجیس طاہر

اسلام آباد(سٹاف رپورٹر)وفاقی وزیر برائے اُمور کشمیر و گلگت بلتستان چوہدری محمد برجیس طاہر نے میڈیا کے نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے کہا ہے کہ بھارت جمہوریت کے پیرہن میں چھپا ہوا کشمیری عوام کا قاتل ہے آج کشمیر ی عوام یوم سیاہ منار ہے ہیں اور پاکستان کی پوری قوم مقبوضہ کشمیر کے بھائیوں کے ساتھ اظہار یکجہتی کر رہی ہے ۔ مقبوضہ کشمیرکے عوام بھارتی یوم آزادی کو بطور یوم سیاہ کے طورپر منا کر پوری دُنیا کو یہ پیغام دے رہے ہیں کہ کشمیریوں پر اب زیادہ دیر ظلم و جبر نہیں کیا جاسکتا ہے سخت کرفیو کے باوجود وہ سڑکوں پر نکل کر بھارتی ظلم وجبر کے خلاف آوازیں بلند کرنا اُنکا معمول بن چکا ہے۔چوہدری محمد برجیس طاہر نے کہا کہ بھارت اپنے آپ کو دُنیا کا سب سے بڑا جمہوری ملک کہلاتا ہے لیکن وہ جتنا مرضی جمہوریت کا واویلہ کرے دُنیا اس کا اصل چہرہ پہچان چکی ہے ۔ بھارت بے شک آج یوم آزادی منائے اس کی مقبوضہ کشمیر میں ظلم و بربریت کودیکھتے ہوئے دُنیا اس کو ناپسندیدگی سے دیکھ رہی ہے اور اب عالمی برادری یہ کہنے پر مجبور ہو گئی ہے کہ یہ کیسا ملک ہے جو خود کو جمہوریت کا چمپین کہتا ہے اور دوسری طرف نہتے اور بے گناہ معصوم کشمیری نوجوانوں ،عورتوں اور بچوں کو قتل کر رہا ہے ۔اُنہوں نے کہا کہ پاکستان سمیت پوری دُنیابھارت کے اس گھناؤنے فعل کی پرُ زور الفاظ میں مذمت کر رہے ہیں چوہدری محمدبرجیس طاہر نے کہا کہ گزشتہ ڈیڑہ مہینے سے کشمیر میں جاری دہلی سرکاری کی ریاستی دہشت گردی سے ہر کوئی واقف ہے انہوں نے اقوام متحدہ پر زور دیتے ہوئے کہا کہ اب فیصلے کی گھڑی آپہنچی ہے کہ عالمی برادری اور اقوام متحدہ کشمیریوں کو اُن کی مرضی کے مطابق حق خود ارادیت دے تاکہ وہ اپنی مرضی سے آزادفضاؤں میں زندگی گزار سکیں۔انہوں نے کہا کہ کشمیری عوام کے ساتھ حق خودارادیت کا جو وعدہ پوری عالمی برادری نے کیا تھا خود بھارت بھی اس میں نہ صرف شریک تھا بلکہ وہ خود ہی اس تنازعے کو لے کر اقوام متحدہ گیا تھاایسی واضح صورتحال کے باوجود کشمیری عوام کو دیے گئے عہد کی پاسداری نہ کرنے سے یقیناًاس عالمی ادارے کا وقار خاصی حد تک مجروح ہوا ہے۔انہوں نے کہا کہ اقوام متحدہ اور دیگر عالمی اداروں کو اس پیش رفت سے بخوبی اندازہ ہ ہو جانا چاہیے کہ مقبوضہ ریاست کے عوام بھارتی قبضے کے کس قدر خلاف ہیں ایسے میں اگر یہ بین الاقوامی ادارے اپنی ساکھ کو مزید مجروح نہیں کرنا چاہتے تو انہیں فوری طور پر کشمیر کے تنازعے کو اپنی منظور کردہ قراردادوں کے مطابق حل کرنے کی جانب عملی پیش رفت کرنی چاہیے۔انہوں نے کہا کہ میں تو قع رکھتا ہوں کہ اقوام متحدہ اور عالمی ضمیر اپنا محاسبہ کرکے مظلوم کشمیریوں کو بھارتی ریاستی دہشت گردی سے نجات دلانے کے سلسلہ میں اپنا انسانی اور اخلاقی فریضہ نبھائے گا۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر