اسلامیہ کالج پشاور میں کوئٹہ پر داخلوں کو چیلنج کردیا گیا

اسلامیہ کالج پشاور میں کوئٹہ پر داخلوں کو چیلنج کردیا گیا

پشاور(نیوزرپورٹر)اسلامیہ کالج پشاورمیں ایف اے ایف ایس سی میں کوٹہ پرداخلوں کو پشاورہائی کورٹ میں چیلنج کردیاگیاہے آئین کے آرٹیکل199کے تحت دائررٹ میں موقف اختیارکیاگیاہے کہ اوپن میرٹ کے لئے مختص 150میں سے 119نشستیں کوٹہ کی بنتی ہیں جبکہ باقی تمام صوبوں میں کوٹے منسوخ قرار دئیے جاچکے ہیں لہذاکوٹہ سسٹم کو کالعدم قرار دیا جائے اورعدالت عالیہ کے جسٹس قیصررشید اور جسٹس روح الامین چمکنی پرمشتمل دورکنی بنچ نے اسلامیہ کالج یونیورسٹی کے وائس چانسلراوررجسٹرار کو جمعہ کے روز طلب کرلیاہے فاضل بنچ نے عیسی خان ایڈوکیٹ کی وساطت سے دائررٹ پٹیشن کی سماعت کی اس موقع پر عدالت کو بتایاگیاکہ اسلامیہ کالج پشاورمیں ایف اے ایس سی کے داخلے جاری ہیں جس کے لئے اوپن میرٹ کے لئے150نشستیں مختص کی گئی ہیں تاہم اوپن میرٹ میں 80فیصد سے زائد نشستیں کوٹہ کی بنتی ہیں جن میں فاٹاایجنسیوں کے لئے مختص کوٹہ ٗ ایف آرزکے لئے کوٹہ ٗ سپورٹس میل اورفی میل کوٹہ ٗ یونیورسٹی آف انجینئرنگ اینڈٹیکنالوجی کے ملازمین کے بچوں کاکوٹہٗ زرعی یونیورسٹی کے ملازمین کے بچوں کاکوٹہ ٗ پشاوریونیورسٹی کے ملازمین کے بچوں کاکوٹہ ٗ اسلامیہ کالجیٹ پشاورکے ملازمین کے بچوں کاکوٹہ جس کی کوئی شرح ہی مقررنہیں اسی طرح اسلامیہ کالجیٹ سکول کے طلبا اورسینئرایلومینائے ٗ اولیول ٗ افغان نیشنل اورغیرملکی طلباء کاکوٹہ شامل ہے اورامسال جو داخلے جاری ہیں ان میں کوٹے کی نشستیں کل119بنتی ہیں جبکہ اس طرح اوپن میرٹ پرصرف 31طلباء کو داخل کیاجائے گا جو کہ ضلع کی عوام کے ساتھ زیادتی ہے لہذاکالج کاکوٹہ سسٹم منسوخ کیاجائے اورتمام طلباء کو دیگر صوبوں کے کالجوں کی طرح اوپن میرٹ پرداخلہ دیاجائے فاضل بنچ نے ابتدائی دلائل کے بعد کالج کے وائس چانسلراوررجسٹرار کو نوٹس جاری کرکے جمعہ کے روز طلب کرلیاہے ۔

مزید : پشاورصفحہ آخر