دیرینہ تعینات اہلکاروں کو برطرف اور اور نئی بھرتیوں پر جواب طلب

دیرینہ تعینات اہلکاروں کو برطرف اور اور نئی بھرتیوں پر جواب طلب

پشاور(نیوزرپورٹر)پشاورہائی کورٹ کے جسٹس قیصررشید اور جسٹس روح الامین پرمشتمل دورکنی بنچ نے ویلج کونسل شاہ منصورمیں گذشتہ چھ سالوں سے تعینات اہلکارکوبرطرف کرکے نئی بھرتیاں کرنے پر ڈی سی صوابی اوراسسٹنٹ ڈائریکٹرلوکل گورنمنٹ صوابی کو آج منگل کے روز عدالت طلب کرلیاہے فاضل بنچ نے یہ احکامات گذشتہ روزمزمل خان ایڈوکیٹ کی وساطت سے دائراخترعلی کی رٹ پرجاری کئے اس موقع پرعدالت کو بتایاگیاکہ درخواست گذار ویلج کونسل شاہ منصورمیں بطوردرجہ چہارم تعینات تھا تاہم ضلعی حکومت نے اسے برطرف کرکے سو نئی آسامیاں مشتہرکی ہیں اور درخواست گذارکاتجربہ ہونے کے باوجودنظرانداز کر دیا گیا ہے لہذامذکورہ یوسی سے درخواست گذار کو بھرتی کرنے کے احکامات جاری کئے جائیں اس موقع پرایڈیشنل ایڈوکیٹ جنرل ہمایون اور آفس اسسٹنٹ محمدجمشید عدالت میں پیش ہوئے اوربتایا کہ مذکورہ اقدام آئین وقانون کے مطابق ہے جس پرجسٹس قیصررشید نے کہاکہ ہم باربارکہہ چکے ہیں کہ سرکاری ملازمین کسی کے مفاد کی خاطرغلط اقدامات نہ کریں مگریہ سلسلہ جاری ہے جبکہ جسٹس روح الامین کاکہناتھا کہ ہم اس بات پربھی غورکررہے ہیں کہ آئندہ کوئی افسر عدالت میں غلط بیانی کرے گایاعدالت کو گمراہ کرنے کی کوشش کرے گاتو اس کے خلاف محکمانہ کاروائی کی سفارش کی جائے تاکہ عدالتوں کاوقت ضائع نہ ہو فاضل بنچ نے ابتدائی دلائل کے بعد آج منگل کے روز اسسٹنٹ ڈائریکٹرلوکل گورنمنٹ صوابی کو عدالت طلب کرلیاہے ۔

مزید : پشاورصفحہ آخر