’اکتوبر میں یہ کام کردو ورنہ۔۔۔‘ ترکی نے یورپ کو اب تک کی سب سے سنگین دھمکی دے دی، مغربی ممالک کی پریشانی کی حد نہ رہی

’اکتوبر میں یہ کام کردو ورنہ۔۔۔‘ ترکی نے یورپ کو اب تک کی سب سے سنگین دھمکی ...
’اکتوبر میں یہ کام کردو ورنہ۔۔۔‘ ترکی نے یورپ کو اب تک کی سب سے سنگین دھمکی دے دی، مغربی ممالک کی پریشانی کی حد نہ رہی

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

انقرہ (نیوز ڈیسک)ترکی میں ناکام بغاوت پر مغربی ممالک کے بے حسی پرمبنی ردعمل کی وجہ سے ترکی اور مغرب کے درمیان کشیدگی پہلے ہی بہت بڑھ چکی تھی مگر اب ترکی نے ایک ایسی دھمکی دے دی ہے کہ جو امریکہ اور یورپ کے لئے کسی ڈراﺅنے خواب سے کم نہیں۔

غیر ملکی خبر رساں ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق ترکی نے مغربی ممالک پر واضح کردیا ہے کہ اگر اس کے شہریوں کو اکتوبر تک یورپ میں بغیر ویزے کے داخلے کا حق نہ ملا تو تارکین وطن کے متعلق طے پانے والا معاہدہ ختم کردیا جائے گا اورغیر قانونی تارکین وطن کا سیلاب یورپ کی جانب رواں دواں ہوجائے گا۔

رپورٹ کے مطابق ترک وزیر خارجہ میلوت چاﺅش اوگلو نے یہ بیان جرمنی کے ایک اخبار سے بات کرتے ہوئے دیا۔ ترک وزیر خارجہ کا کہنا تھا کہ مغرب کو ترکی کے ساتھ کئے گئے معاہدوں کی پابندی کرنا ہوگی اور اگر ان معاہدوں کی روشنی میں اکتوبر تک ترک شہریوں کو یورپ میں بغیر ویزے کے داخلے کا حق نہ ملا تو ترکی بھی تارکین وطن کو یورپ جانے سے روکنے کا معاہدہ ختم کردے گا۔

’اگر یہ کام کیا تو تمہاری خیر نہیں‘ اسرائیل کا ظلم اتنا بڑھ گیا کہ امریکہ کے صبر کا پیمانہ بھی لبریز ہوگیا، تاریخ میں پہلی مرتبہ اسرائیل کو خطرناک ترین دھمکی دے دی

واضح رہے کہ مغربی ممالک نے ترکی کے ساتھ وعدہ کیا تھا کہ اگر لاکھوں تارکین وطن کا یورپ کی جانب بہاﺅ روک دیا جائے تو اس کے شہریوں پر یورپ میں داخلے کے لئے ویزہ کی پابندی ختم کردی جائے گی۔ بعدازاں یورپی ممالک نے ترکی کے انسداد دہشت گردی قوانین کے متعلق شکوک و شبہات کا اظہار کرتے ہوئے اس معاہدے سے فرار کی کوشش شروع کردی۔ یورپ کا موقف ہے کہ ترکی انسداد دہشت گردی قوانین کو نرم کرے جبکہ ترکی کا کہنا ہے کہ ملک کو لاحق سنگین خطرات کے باعث ان قوانین میں نرمی ممکن نہیں ہے۔

یورپین کمشنر گووینٹر اوٹینجر پہلے ہی کہہ چکے ہیں کہ ترکی میں ہزاروں افراد کی گرفتاری کے بعد وہ نہیں سمجھتے کہ اسے ویزہ فری ٹریول کی سہولت دی جاسکتی ہے ۔ ان کے اس بیان کے بعد یورپ اور ترکی کے درمیان تلخی مزید بڑھ گئی ہے اور بالآخر ترکی نے بھی واضح الفاظ میں کہہ دیا ہے کہ اگر اکتوبر تک ویزہ فری ٹریول کا وعدہ پورا نہ کیا گیا تو یورپ لاکھوں تارکین وطن کے سیلاب سے نمٹنے کے لئے تیار ہوجائے۔

مزید : بین الاقوامی