برطانوی مبلغ انجم چودھری مجرم قرار،ستمبرمیں سزاسنائے جانے کا امکان

برطانوی مبلغ انجم چودھری مجرم قرار،ستمبرمیں سزاسنائے جانے کا امکان
برطانوی مبلغ انجم چودھری مجرم قرار،ستمبرمیں سزاسنائے جانے کا امکان

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

لندن(مانیٹرنگ ڈیسک)ایک برطانوی عدالت نے سخت گیر برطانوی مبلغ انجم چوہدری کو نام نہاد دولتِ اسلامیہ کےلیے حمایت حاصل کرنے کی دعوت دینے کا مجرم قرار دیا ہے'انجم چودھری کوستمبرمیں سزاسنائے جانے کا امکان ہے۔

بی بی سی نیوز کے مطابق انجم چودھری کوستمبرمیں سزاسنائے جانے کا امکان ہے، انجم چودھری اورانکے ساتھی کو10سال قید کی سزا ہوسکتی ہے،ذرائع کا کہنا ہے کہ انجم چودھری اور ان کے ساتھی پر داعش کی حمایت کا الزام ہے،ان کو خصوصی آپریشن کے دوران گرفتار کیا گیا تھا۔

ایک برطانوی عدالت نے سخت گیر برطانوی مبلغ انجم چوہدری کو نام نہاد دولتِ اسلامیہ کےلیے حمایت حاصل کرنے کی دعوت دینے کا مجرم قرار دیا ہے،انجم چوہدری اور ان کے ساتھی محمد میزان الرحمان کو 28 جولائی کو اولڈ بیلی کورٹ نے سزا سنائی تھی لیکن اس کی خبر شائع کرنے پر پابندی تھی۔انجم چوہدری اور ان کے قریبی ساتھی محمد میزان الرحمان پر دہشت گردی ایکٹ 2000 کی دفعہ بارہ کے تحت الزام عائد کیا گیا ہے کہ انھوں نے شدت پسند تنظیم دولت اسلامیہ کی حمایت حاصل کرنے کی دعوت دی تھی۔

لندن کے علاقے الفورڈ سے تعلق رکھنے والے 48 سالہ انجم چوہدری اسلامی گروپ المہاجرون جسے ’اسلام فور یوکے‘ کے نام سے بھی جانا جاتا ہے کے سابق سربراہ ہیں۔ اسے سنہ 2014 کالعدم قرار دے دیا گیا تھا۔

مزید : بین الاقوامی