لاہور چیمبر کی جانب سے احتجاج کے لیے سڑکوں کی بندش کی سختی سے مخالفت

لاہور چیمبر کی جانب سے احتجاج کے لیے سڑکوں کی بندش کی سختی سے مخالفت

  



لاہور(کامرس رپورٹر) لاہور چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کے قائم مقام صدر امجد علی جاوا اور نائب صدر محمد ناصر حمید خان نے ایک مرتبہ پھر احتجاج اور دیگر مقاصد کے لیے سڑکیں بند کرنے کے عمل کی سختی سے مخالفت کرتے ہوئے قانون کے سختی سے نفاذ کی ضرورت پر زور دیا ہے۔ ایک بیان میں لاہور چیمبر کے عہدیداروں نے کہا کہ احتجاج کرنے کے لیے مال روڈ سمیت دیگر بڑی سڑکیں بند کرنا ایک تماشہ بن چکا ہے جس کی وجہ سے کاروباری سرگرمیوں کو بھاری نقصان ہورہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ پنجاب حکومت اور تمام متعلقہ اداروں کو سڑکیں بلاک کرنے کے خلاف قانون پر سختی سے عمل درآمد کرانا ہوگا کیونکہ جس کا جب دل چاہے مال روڈ اور دیگر سڑکیں بند کرکے پورے شہر کو بدترین مسائل میں مبتلا کردیتا ہے، قانون و اخلاقیات سے بالاتر ہوکر مظاہرے کرنے والے گروپ مصروف ترین سڑکوں اور ہائی ویز کو بلاک کرکے تاجروں کے لیے بھاری تجارتی و معاشی نقصان اور عوام کے لیے سخت ذہنی اذیت کا باعث بنتے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ روزانہ مظاہروں کی وجہ سے بدترین ٹریفک جام ہوجاتا ہے جس کی وجہ سے تجارتی اشیاء کی آمد و رفت بْری طرح متاثر ہوتی ہے، خریدار منڈیوں تک جبکہ طلبا سکولوں اور مریض اسپتالوں تک نہیں پہنچ پاتے اور کئی راستے میں ہی دم توڑ جاتے ہیں۔امجد علی جاوا اور محمد ناصر حمید خان نے کہا کہ پرامن مظاہرے کرنا لوگوں کا حق ہے لیکن اس کا مطلب نہیں نہیں کہ وہ دن رات کو کسی بھی وقت اور کہیں بھی مظاہرہ کرسکتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ مظاہرین اور عوام کے حقوق کے درمیان توازن قائم ہونا چاہیے، اگر کوئی مظاہرہ کرتا ہے تو یہ یقینی بنایا جائے کہ اس کی وجہ سے کوئی اور متاثر نہ ہو۔ احتجاج کرنے والے گروپس کو پابند کیا جائے کہ وہ مظاہرہ یا احتجاج کرنے سے قبل اجازت لیں جبکہ وقت اور جگہ کا تعین حکومت کرے جبکہ ضلعی حکومت اور قانون نافذ کرنے والے ادارے حکومت کے فیصلے پر عمل درآمد یقینی بنائیں۔

مزید : کامرس


loading...