جتنی آئین اجازت دیتا ہے ا تنی کابینہ ہونی چاہئے

جتنی آئین اجازت دیتا ہے ا تنی کابینہ ہونی چاہئے
جتنی آئین اجازت دیتا ہے ا تنی کابینہ ہونی چاہئے

  



اسلام آباد (صباح نیوز) وفاقی وزیر برائے ماحولیاتی تبدیلی سینیٹر مشاہد اللہ خان نے کہا ہے کہ اگر وزراء کم ہوں گے تو ایک وزیر کے پاس اضافی وزارتیں ہوں گی اور بہتر کام نہیں ہو پائے گا۔ نجی ٹی وی سے انٹرویو میں مشاہد اللہ خان کا کہنا تھا کہ زیادہ وزراء سے خزانہ پر بوجھ نہیں پڑتا۔ ان کا کہنا تھا کہ یہ تاثر درست نہیں کہ بڑی کابینہ بنانے سے خزانے پر بوجھ پڑتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ زیرو فیصد بھی اضافی بوجھ نہیں پڑتا بلکہ وہ اچھی حکمرانی میں زیادہ موثر کردار ادا کرتے ہیں۔ ان کا کہنا تھا کہ وزراء کم ہوں گے تو ایک، ایک وزیر کے پاس دو دو تین تین اضافی چارج ہوتے ہیں جن کے ساتھ وہ انصاف نہیں کر پاتا اور بعض اوقات محکموں کے بہت ہی اہم مسائل نظرانداز ہو جاتے ہیں جس کی وجہ سے حکومت کی کارکردگی پر منفی اثرات پڑتے ہیں۔ مشاہد اللہ خان کا کہنا تھا کہ میں ذاتی طور پر اس بات کے حق میں ہوں کہ جتنا آئین اجازت دیتا ہے۔ اتنے وزیر اور اتنی کابینہ ضرور ہونی چاہئے۔

مزید : صفحہ اول


loading...