نواز شریف نے بیٹے کی کمپنی سے 6ماہ کی تنخواہ لی

نواز شریف نے بیٹے کی کمپنی سے 6ماہ کی تنخواہ لی
 نواز شریف نے بیٹے کی کمپنی سے 6ماہ کی تنخواہ لی

  



لاہور(مانیٹرنگ ڈیسک) پاکستان پیپلز پارٹی کے رہنما قمرزمان کا ئرہ کا لاہور میں صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کہنا تھا کہ جس دن پانامہ کیس کا فیصلہ نواز شریف کے خلاف آیا اسی دن ان کو ملک کے خراب حالات نظر ہونا شروع ہو گئے ،حالانکہ ملک کے اند رحکومت ان کی جماعت کی ہی ہے تو یہ ان کو بہتر کرنے کی کوشش کیوں نہیں کررہے ؟ ریلی کس کے خلاف تھی؟ ہمیں تو سمجھ نہیں آرہا۔

تفصیلات کے مطابق لاہور میں پاکستان پیپلز پارٹی کے سینئیر رہنما قمر زمان کائرہ کا میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہنا تھا کہ جس دن سپریم کورٹ کافیصلہ نواز شریف کے خلاف آیا کیا اسی دن ملک کے حالات خراب ہوئے تھے؟جب تک آپ وزیراعظم تھے تب تک ملک میں سب اچھا تھا جیسے ہی فیصلہ آپ کے خلاف آیا آپ نے اعلی عدلیہ کے خلاف مہم بازی شروع کر دی۔غریب کے پاس رہنے کو گھر نہیں یہ بات نواز شریف کو نااہلی کے بعد ہی کیوں یاد آئی؟یہ مسئلہ تو اس سے پہلے بھی موجود تھا۔قمر زمان کائرہ کا کہنا تھا کہ ملک میں لوڈ شیڈنگ پہلے بھی ہورہی تھی اب بھی ہو رہی ہے ،تبدیلی کے نعرے لگانے والے اب کہاں ہیں ؟غریب کے پاس تو نواز شریف کی حکومت میں بھی نہیں تھا نااہلی کے بعد ان کو ایک دم یہ بات کیسے یاد آگئی؟ان کاکہنا تھا کہ میرٹ پر فیصلہ آنے کی وجہ سے عدالتوں کو تنقید کانشانہ بنایا جا رہاہے۔سینئیر رہنما کا کہنا تھا نواز شریف نے اپنے بیٹے کی کمپنی سے چھ ماہ تنخواہ لی ،اب کہ رہے کہ تنخواہ نہ لینے پر نکال دیا گیا،ان کاشہباز شریف کو تنقید بناتے ہوئے کہنا تھا کہ وہ اب کہ رہے کہ امراء4 کے پیسے ملک سے باہر پڑے ہیں،جبکہ غریب کے پاس رہنے کو چھت نہیں پنجاب میں حکومت بھی ان کی ہے تو کیوں نہیں یہ ایسے منصوبے شروع کرتے جس سے باہر پڑاہو ا پیسہ پاکستان منتقل ہو۔قمر زمان کائرہ کا کہنا تھا کہ ملک کوممتاز بنانے کے وعدے کہاں گئے ؟عالمی ادارے ملک کی معیشت کی کوئی اور ہی صورت حال بتا رہے ہیں،ملک کے اند ر مرکزاور سب سے بڑے صوبے میں حکومت آپ کی جماعت کی ہی ہے تو آپ کس کے خلاف ریلیا ں نکال رہے ہیں؟بہتر ہوتا آپ لوگوں کی فلاح کے لیے کام کرتے جس میں آپ ناکام رہے ہیں

مزید : صفحہ اول


loading...