کالجوں اور جامعات کے اساتذہ کی ترقیاں اور تعیناتیاں ٹریننگ سے مشروط

کالجوں اور جامعات کے اساتذہ کی ترقیاں اور تعیناتیاں ٹریننگ سے مشروط

  



 لاہور(حافظ عمران انور)یونیورسٹیزاور کالجز اساتذہ کوٹریننگ مکمل کئے بغیر ترقی نہیں ملے گی،انتظامی عہدوں پر تعیناتی بھی ٹریننگ سے مشروط کر دی گئی ۔اس مقصد کیلئے پنجاب ہائیر ایجوکیشن کمیشن نے فکیلٹی ممبران کوجدید ٹیکنالوجی اور بین الاقوامی طرز کے مطابق نئی تکنیکوں سے متعارف کروانے کی غرض سے ’’ سٹاف ڈویلپمنٹ اکیڈمی ‘‘ بھی قائم کی گئی ہے جس کا باقاعدہ افتتاح 21اگست کو ہوگا ۔تفصیلات کے مطابق پنجاب ہائر ایجوکیشن کمیشن نے یونیورسٹی آف ایجوکیشن کے اشتراک سے ’’ سٹاف ڈویلپمنٹ اکیڈمی ‘‘ کے قیام کا فیصلہ کیا گیا ہے۔نئی سکیم کے تحت ٹیچرز ٹریننگ اکیڈمی میں امریکہ اور برطانیہ سمیت دیگر ملکی وغیر ملکی ماہرین پاکستانی اساتذہ کو ٹریننگ دینگے۔چیئرمین پنجاب ہائیرایجوکیشن کمیشن ڈاکٹر نظام الدین کے مطابق صوبہ بھر کی یونیورسٹیز اور کالجز کے ٹیچرز کیلئے ٹریننگ کا آغاز ابتدائی طورپر لاہورسے کیاجارہا ہے جس کیلئے ایجوکیشن یونیورسٹی ٹاؤن شپ کیمپس میں 32کمرے بھی تعمیر کرلئے گئے ہیں،ٹریننگ کے پہلے مرحلہ میں مختلف کیٹیگری کے 35اساتذہ کو فائنل کیا گیا ہے، ٹریننگ کو دو حصوں میں تقسیم کیا گیا ہے۔ لانگ اور شارٹ ٹرم ٹریننگ کیلئے لیکچر ہال اور کمپیوٹر لیب بھی قائم کردی گئی ہیں۔انہوں نے بتایا کہ ملک بھر میں اساتذہ کیلئے اپنی طرز کی واحد اکیڈمی میں پری سروس اور ایڈمنسٹریٹو سٹاف کے علاوہ ڈینز،ڈائریکٹرز ز،پرنسپلز،رجسٹرار،خزانچی اور کنٹرولر ا متحانات سمیت شعبہ تعلیم سے تعلق رکھنے والے دیگر افراد کوجدید امورسے آگاہی ،نئے مضامین سے روشناس کروانے اور انتظامی امور چلانے کیلئے سپیشل ٹریننگ دی جائیگی۔اس حوالے سے گفتگو کرتے ہوئے ڈاکٹر نظام الدین نے کہا کہ یونیورسٹیز اور کالجز اساتذہ کواکیڈمی میں غیر ملکی ماہرین،سابق بیوروکریٹس،وائس چانسلرزاور اکیڈمک ونگ سے وابستہ افراد ٹریننگ دیں گے ا و ران کوپیشہ ورانہ امور کے بارے میں آگاہی بھی دی جائیگی۔انہوں نے بتایا کہ ابتدائی طورپر مرحلہ وار یونیورسٹیز اور کالجز کے اساتذہ کو ٹریننگ کے عمل سے گزارا جائے گا۔

مشروط

مزید : صفحہ اول


loading...