سی ٹی ڈی نے متحدہ دور کی پولیس بھرتیوں کی چھان بین شروع کردی

سی ٹی ڈی نے متحدہ دور کی پولیس بھرتیوں کی چھان بین شروع کردی

  



کراچی (کرائم رپورٹر) ایم کیو ایم کے دور میں کون کس عہدے پر سندھ پولیس میں بھرتی ہوا، سی ٹی ڈی نے مکمل چھان بین کے لیے کراچی پولیس کو خط لکھ دیا۔ سی ٹی ڈی ذرائع کے مطابق اسکروٹنی کی درخواست ٹارگٹ کلر رضوان کے انکشافات پرکی گئی ہے جسے گذشتہ ماہ ساتھیوں سمیت گرفتار کیا گیا تھا، گرفتار ٹارگٹ کلر رضوان سندھ پولیس میں بحیثیت کانسٹیبل ڈیوٹی انجام دے رہا تھا، ملزم ساتھیوں کے ہمراہ پولیس اہلکاروں سمیت دودرجن سے زائد افراد کی ٹارگٹ کلنگ کی تھی، سی ٹی ڈی ذرائع کے مطابق ملزمان ساوتھ افریقہ سیٹ اپ سے ہدایت لے کر کلنگ کرتے تھے، ٹی ڈی ذرائع کے مطابق 2002 سے 2013 تک پولیس میں بھرتیوں کا ریکارڈ چیک کیا جائے گا، ،، 2002 سے 2007 تک وزارت داخلہ متحدہ کیپاس تھی، جبکہ 2008 سے 2013 تک مخلوط حکومت میں متحدہ نے پھرسے اپنے کارکن بھرتی کرائے، سی ٹی ڈی ذرائع کے مطابق ایم کیوایم نے تقریبا 2200 کے قریب کارکنوں کو پولیس میں بھرتی کروایا، جس میں ہر سیکٹر سے 50 سے 60 کارکنان شامل تھے، سی ٹی ڈی ذرائع کے مطابق گرفتارٹارگٹ کلر رضوان کی جے آئی ٹی کے بعد دوبارہ اسکروٹنی کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔

مزید : صفحہ آخر