توہین عدالت ،نوازشریف سمیت 13لیگی وزراء ارکان اسمبلی کو نوٹس

توہین عدالت ،نوازشریف سمیت 13لیگی وزراء ارکان اسمبلی کو نوٹس

  



لاہور(نامہ نگارخصوصی)لاہور ہائیکورٹ نے توہین عدالت کی درخواست پرسابق وزیراعظم نواز شریف اورمسلم لیگ (ن) کے 13وزراء وارکان پارلیمنٹ کو نوٹس جاری کردیئے ہیں ۔مسٹر جسٹس مامون رشید شیخ نے یہ نوٹس آمنہ ملک اور سول سوسائٹی نیٹ ورک آف پاکستان کی درخواست پر جاری کئے ہیں ۔عدالت نے توہین عدالت کی اس درخواست پرپیمرا کے چیئرمین ابصار عالم کو بھی نوٹس جاری کئے ہیں ۔فاضل جج نے مدعا علیہان کو 25اگست تک جواب داخل کرنے کی ہدایت کی ہے ۔ سا بق وزیراعظم کے علاوہ مسلم لیگ کے جن رہنماؤں کو نوٹس جاری کئے گئے ہیں ان میں اسحاق ڈار، آصف کرمانی ،دانیال عزیز ، خواجہ آصف ،عابد شیر علی ،مائزہ حمید ، سعد رفیق ،طلال چودھری ،طارق فضل چودھری ،مشاہد اللہ ، مریم اورنگ زیب ،رانا ثناء اللہ اور پرویز رشید شامل ہیں۔درخواست میں اظہر صدیق ایڈووکیٹ کی وساطت سے موقف اختیار کیا گیاکہ مدعا علیہان نے پاناما کیس کے فیصلے کے بعد مسلسل عدلیہ مخالف بیان بازی کی جو وا ضح طور پر توہین عدالت ہے۔سابق وزیراعظم نے اسلام آ باد سے لاہور تک اپنی ریلی کے دوران پاناما لیکس کیس سے متعلق عدلیہ کوتضحیک کا نشانہ بنایااورلوگوں کو عدلیہ کیخلاف ا کسا یا ، د یگر مدعا علیہان نے بھی اسی قسم کی بیان بازی کی اور یہ بیانات الیکٹرانک میڈیا پر نشر کئے جاتے رہے ،پیمرا کے چیئر مین ابصا ر عالم نے بھی ان بیانات کو ٹی وی چینلز پر نشر کرنے سے روکا اورنہ ہی اس حوالے سے اپنا کردار ادا کیا ۔ د ر خو ا ست میں کہا گیا ہے کہ سابق وزیراعظم اور مذکورہ وزراء و ارکان پارلیمنٹ کے علاوہ چیئرمین پیمرا نے بھی توہین عدالت کا ارتکاب کیا ہے ، ا ن کیخلاف آئین کے آرٹیکل 204کے تحت کارروائی عمل میں لائی جائے ،درخواست میں یہ بھی کہا گیا ہے کہ مدعا علیہان نے عدلیہ مخالف بیان بازی کے ذریعے آئین کے آرٹیکل 62 اور 63کی خلاف ورزی کا ارتکاب کیا ہے، ان ارکان پارلیمنٹ کی نااہلی کیلئے متعلقہ فورم چیئرمین سینٹ اور سپیکر زقومی و صوبائی اسمبلی سے بھی رجوع کیا گیا مگر درخواست گزار کی درخواستیں رد کر دی گئیں کیونکہ سپیکر قومی و صوبائی اسمبلی مسلم لیگ (ن)سے تعلق رکھتے ہیں لہٰذادرخواستوں کا مسترد کیا جانا بدنیتی پر مبنی ہے، انہوں نے استدعا کی ہے کہ عدالت مذکورہ مدعا علیہان کیخلاف توہین عدالت کی کارروائی عمل میں لائے،درخواست میں مذ کو رہ 13ارکان اسمبلی اوروزراء کو نااہل قرار دینے کی استدعا بھی کی گئی ہے ۔

مزید : صفحہ آخر


loading...