تبادلوں کے احکامات واپس، مطالبات منظور کرنے کی یقین دہانی پر ینگ ڈاکٹرز نے ہڑتال ختم کردی

تبادلوں کے احکامات واپس، مطالبات منظور کرنے کی یقین دہانی پر ینگ ڈاکٹرز نے ...

  



لاہور (جنر ل ر پو رٹر ) سرکاری ہسپتالوں میں مریضوں کی خواری ختم، محکمہ صحت کی جانب سے مطالبات کی منظوری کی یقین دہانی پر ینگ ڈاکٹرز نے ہڑتال ختم کرنے کا اعلان کر دیا۔تفصیلات کے مطا بق ینگ ڈاکٹرز ایسوسی ایشن کی کال پر سرکاری ہسپتالوں میں تقریبا دو ہفتے تک کام بند رہا،اس دوران مریضوں اور اْن کے لواحقین کو شدید مشکلات کا سامنا رہا، لوگ علاج کیلئے دربدر کی ٹھوکریں کھاتے رہے اور ینگ ڈاکٹرز اپنی ضد پر قائم رہے۔محکمہ صحت کی کوششوں کے باوجود ہسپتالوں میں علاج معالجہ مکمل طور پربحال نہ ہوا۔ ڈاکٹرز کی ایک ہی شرط تھی کہ حکومت ان کے مطالبات منظور کرے تو وہ کام کرنے کو تیار ہیں۔ اس دوران کئی وائے ڈی اے رہنماؤں کے دوسرے شہروں میں تبادلے بھی کئے گئے مگر صورتحال قابو میں نہ آسکی۔آخرکار محکمہ صحت کو وائے ڈی اے کے سامنے گھٹنے ٹیکنے پڑے۔ مطالبات کی منظوری کی یقین دہانی کرائی اور دوسرے شہروں میں تبادلوں کے احکامات واپس لے لئے۔ینگ ڈاکٹرز ایسوسی ایشن کے سینئر رہنما ڈاکٹر معروف نے پریس کانفرنس کر کے باقاعدہ طور پرہڑتال ختم کرنے کا اعلان کیا۔انہوں نے بتایاکہ محکمہ صحت کے ساتھ مذاکرات کامیاب ہوگئے ہیں۔ محکمہ صحت اور پنجاب اکیڈمک کونسل نے نظرثانی کی یقین دہانی کرادی ہے۔ڈاکٹر معروف کہتے ہیں کہ ان کے تمام مطالبات غریب مریضوں کیلئے تھے، برن یونٹس، آئی سی یو، سی سی یو اور سیکیورٹی سمیت دیگر مطالبات کا تعلق مریضوں سے ہے۔ینگ ڈاکٹرزکی ہڑتال ختم ہونے پر مریضوں اور ان کے لواحقین نے سْکھ کا سانس لیاہے۔ انہوں نے درخواست کی کہ آئندہ ایسی روش اختیار کرنے سے پہلے مریضوں کا ضرور سوچیں کیونکہ ہڑتالوں سے علاج معالجہ تعطل کا شکار ہو جاتا ہے جس کا نقصان صرف مریضوں کو ہوتا ہے۔

مزید : صفحہ آخر


loading...