تحریک انصاف نے بھی سندھ میں نیب قوانین کو ختم کرنے کا بل چیلنج کر دیا

تحریک انصاف نے بھی سندھ میں نیب قوانین کو ختم کرنے کا بل چیلنج کر دیا

  



کراچی (اسٹاف رپورٹر)سندھ ہائی کورٹ میں پاکستان تحریک انصاف نے بھی سندھ نیب قوانین کو ختم کرنے کے بل کو عدالت میں چیلنج کردیا۔ پی ٹی آئی رہنما عارف علوی نے اب آئی ہے تیری باری، گو زرداری گو زرداری کا نعرہ بھی لگا دیا۔تفصیلات کے مطابق پاکستان تحریک انصاف نے بھی سندھ نیب قوانین کو ختم کرنے کے بل کو عدالت میں چیلنج کردیا۔ درخواست میں کہا گیا کہ پاکستان پیپلز پارٹی کرپشن کو چھانے کے لیے نیب قوانین کو منسوخ کیا۔ درخواست میں استدعا کی گئی ہے کہ سندھ اسمبلی کے بل کو کالعدم قرار دے کر نیب قوانین کو بحال کیا جائے کیا۔ کرپٹ حکومت اپنی کرپشن کو بچانے کے لیئے زبردستی کے قوانین لا رہی ہے۔ درخواست میم کہا گیا ہے کہ اٹھارہویں ترمیم کے بعد بھی وفاقی و صوبائی حکومتوں کے فوجداری قوانین کا وجود برقرار ہے۔ اگر وفاقی و صوبائی فوجداری قوانین میں تضاد ہو وفاقی قانون کا اطلاق ہوگا۔ درخواست میں کہا گیا کہ سندھ حکومت کو وفاقی حکومت کا قانون ختم کرنے کا کوئی اختیار نہیں۔ درخواستں دائر کرنے کے بعد میڈیا سے بات کرتے ہوئے عارف نے کہا پیپلز پارٹی کی نیب قانون ختم کرنے لگتا ہے ان کی نیت خراب ہے۔ سالانہ دس ارب ڈالر چوری ہوکر دبئی جاتا ہے۔ عارف علوی نے کہا کہ سندھ میں پی پی نے قوانین کا حشر خراب کردیا۔ ان کا کہنا تھا جس طرح نواز شریف نے نیب کر تباہ کیا اسی طرح زرداری بھی نیب کو ختم کرنا چاہتے ہیں۔ پی ٹی کے رہنما عارف علوی نے کہا نیب کو سندھ میں کرپٹ افراد پر ہاتھ ڈالنے سے روکنے کی کوشش ہے۔ ان کا کہنا تھا وفاقی ادارے کو چوروں کو پکڑنے سے روکا جارہا ہے۔ سندھ کے تعلیمی ادارے اسپتال سب اداروں کے فنڈز چوری کئے گئے۔ عارف دلوی نے کہا کہ لاڑکانہ کیلئے اربوں روپے نکالے گئے اگر ایک ارب بھی لگ جاتا تو شہر بدل جاتا۔ ان کا کہنا تھا کہ پانامہ کے بعد تحریک انصاف کسی کو کرپشن چھپانے کی اجازت نہیں دے گی۔ تحریک انصاف کے رکن سندھ اسمبلی خرم شیر زمان نے کہا کہ جو سندھ حال ہے وہ پورا پاکستان جانتا ہے۔ یہ جانتے ہیں نواز شریف کے بعد انکی باری ہے۔ پی پی طاقت کے زور کا قوانین ختم کررہی ہے۔ خرم شیر زمان نے کہا کہ تمام سیاسی جماعتوں کے اراکین نے اسمبلی اجلاس میں اس بل کو مسترد کیا اور اجلاس کا بائیکاٹ کیا۔ انہوں نے کہا کہ پیپلز پارٹی جانتی تھی نواز شریف کے بعد چوری پکڑے جانے کی انکی باری ہے۔ سندھ اسمبلی میں پی ٹی آئی کے تین ممبرز ہیں لیکن ہم نے بھر پور کردار ادا کیا۔ پی ٹی آئی کے مرکزی رہنما علی زیدی نے کہا کہ وفاقی قوانین کو صوبائی حکومت ختم نہیں کر سکتی۔ ان کو پتہ ہے نیب حرکت میں آئی تو زرداری اور ان کا دوست انور مجید پکڑے جائیں گے۔ علی زیدی نے کہا کہ ایک فرعون گر گیا دوسرے فرعون کی باری آنے والی ہے۔ تحریک انصاف پی پی کے اسکنڈل بے نقاب کرے گی۔ علی زیدی نے کہا کہ آرٹیکل ایک سو تینتالیس نہیں دیتا کہ نیب بند کردیا جائے۔ ایڈیشن تو ہوسکتا ہیلیکن نیب بند نہیں ہوسکتا۔ علی زیدی نے کہا کہ کے پی کے میں اضافی ضرور ہوا لیکن نیب بند نہیں کیا گیا۔ اس ملک میں اب کسی کو چوری نہیں کردینگے۔

مزید : کراچی صفحہ اول


loading...