ضیاء الحق سرحدی کی قیادت میں وفد کی کلکٹر کسٹمز پشاور سے ملاقات

ضیاء الحق سرحدی کی قیادت میں وفد کی کلکٹر کسٹمز پشاور سے ملاقات

  



پشاور( کرائمز زرپورٹر)فرنٹیئر کسٹمز ایجنٹس گروپ (FCAG)خیبر پختونخوا کے صدر ،آل پاکستان کسٹمز ایجنٹس ایسوسی ایشن (APCAA) کے مرکزی وائس چیئرمین اورپاکستان افغانستان جائنٹ چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری(PAJCCI) کے سینئر نائب صدر ضیاء الحق سرحدی کی سربراہی میں خالد شہزاد سینئر نائب صدر (FCAG) ٗ امتیاز احمد علی نائب صدر ٗ اور آصف جمال جنرل سیکرٹری ٗپر مشتمل ایک وفد نے نئے تعینات ہونے والے کلکٹر کسٹمز پشاورگل رحمان خان سے کسٹمز ہاؤس میں ملاقات کی ۔ وفد نے کلکٹر کسٹمز پشاورگل رحمان خان کو عہدہ سنبھالنے پر مبارکباد پیش کی اور ان کیلئے نیک خواہشات کا اظہار کیا ۔ فرنٹیئر کسٹمز ایجنٹس گروپ کے وفد نے کلکٹر کسٹمز پشاور کو امپورٹرز اور ایکسپورٹرز سمیت کلیئرنگ ایجنٹس کی مشکلات سے آگاہ کیا اور انہیں بتایا کہ ڈرائی پورٹ ٗ طورخم کسٹمز سٹیشن اور ایئرپرٹ پر کلیئرنگ ایجنٹس کو بعض مسائل کا سامنا ہے جن کے حل کیلئے اقدامات اٹھانے کی ضرورت ہے ۔وفد نے انہیں بتایا کہ پشاور ڈرائی پورٹ کے لئے بانڈڈ کیریئر کے علاوہ پرائیویٹ ٹرکوں کو ایکسپورٹ کی اجازت دی جائے تاکہ ایکسپورٹرز کو سہولیات میسر آئیں۔کیونکہ پشاور ڈرائی پورٹ پر گذشتہ آٹھ سالوں سے پاکستان ریلوے فعال نہ ہونے کی وجہ سے پشاور سے ایکسپورٹ کا عمل بذریعہ ریلوے ختم ہو کر رہ گیا ہے انہوں نے پشاور ڈرائی پورٹ پر سہولیات کی عدم فراہمی اور افغانستان ایکسپورٹ ہونیوالے مال کی براستہ طورخم ایکسپورٹ کے دوران غیر قانونی چیک پوسٹوں کے خاتمے سمیت دیگر مسائل سے آگاہ کیا ۔ کلکٹر کسٹمز پشاورگل رحمان خان نے وفد کا شکریہ ادا کیا اور کہا کہ وہ ملک و قوم کے خدمت کے جذبے کے تحت آئے ہیں اور انشاء تعالیٰ بحیثیت کلکٹر کسٹمز بزنس کمیونٹی کے مسائل کے حل کیلئے اقدامات اٹھائے جائیں گے ۔ انہوں نے کہا کہ کسٹم کلیئرنگ ایجنٹس اور محکمہ کسٹمز کا چولی دامن کا ساتھ ہے اور یہ ایک دوسرے کیلئے لازم و ملزوم ہیں۔انہوں نے وفد کے مسائل سے مکمل طور پر اتفاق کیا اور کہا کہ کسٹمز کلکٹریٹ پشاورکسٹمز ایجنٹس حضرات کے مسائل ترجیحی بنیادوں پر حل کرے گا۔ضیاء الحق سرحدی نے کسٹمز ایجنٹس کے وفدسے ان کی گذارشات پر ہمدردانہ غور کرنے کی یقین دہانی پر کلکٹر کسٹمز پشاور کا شکریہ ادا کیا ۔ اور اپنے گروپ کی جانب سے ہر ممکن تعاون کا اظہار کیا۔

مزید : پشاورصفحہ آخر


loading...