نوجوان نسل مستقبل کی ذمہ داریوں کیلئے کمر بستہ ہوجائیں ،مولانا شجاع الملک

نوجوان نسل مستقبل کی ذمہ داریوں کیلئے کمر بستہ ہوجائیں ،مولانا شجاع الملک

  



تخت بھائی (نامہ نگار ) جمعیت علماء اسلام کے صوبائی جنرل سیکرٹری و سابقہ ایم این اے مولانا شجاع الملک اور معروف پشتو ادیب و شاعر پروفیسر اباسین یوسفزئی نے کہا ہے کہ پاکستان کی روشن مستقبل اور آئندہ کے چیلنجز سے نمٹنے کے لیے نوجوانوں کو اپنی ذمہ داریوں کا احساس کرنا چاہیے، پشتونوں کے آباء و اجداد نے تحریک آزادی میں لازوال قربانیاں دی ہیں ۔وہ گل بہار کالونی گراؤنڈ میں یوم آزادی کے موقع پر تخت بھائی یوتھ پارلیمنٹ کے زیر اہتمام منعقدہ تقریب سے خطاب کررہے تھے جس سے جے یو آئی کے سابقہ امیدوار برائے صوبائی اسمبلی علامہ محمد صدیق، ضلع مردان کے کنوینر اسد کشمیری، اے این پی کے مرکزی کونسل کے ممبر ملک اعجاز خان، بار ایسوسی ایشن کے صدر قمر زمان خان ایڈوکیٹ، مرکزی تنظیم تاجران تخت بھائی کے صدر حاجی طارق خان، تخت بھائی یوتھ پارلیمنٹ کے چیئرمین فاروق شاہ، صدر الحاج سردراز خان اور جنرل سیکرٹری افضال احمد نے بھی خطاب کیا۔ اس موقع پر نوجوانوں کے علاوہ سیاسی و سماجی رہنماء و علاقہ معززین کثیر تعداد میں موجود تھے جبکہ میڈیا کلب تخت بھائی کے سرپرست اعلیٰ و نگران چیئرمین احمد زادہ مہمند کو صحافتی میدان میں اعلیٰ خدمات پر ایوارڈ سے نوازا گیا ۔ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے مقررین نے کہا کہ اپنی دھرتی کے ساتھ محبت ایمان کا حصہ ہے اور اس کا اظہار کرنا ہمارا ملی فریضہ ہے ، ملک کو درپیش چیلنجز سے نمٹنے کے لیے نوجوانوں کو اپنی ذمہ داریوں کا احساس کرنا ہوگا ، یوم آزادی کے موقع پر اتفاق و اتحاد کا مظاہرہ کرنا قومی یکجہتی کی علامت ہے ، انہوں نے کہا کہ ملک کو درپیش مسائل کے اصل ذمہ دار سٹبلشمنت ہے جبکہ انگریز کے دور سے موجود برٹش گورنمنٹ کی تشکیل کردہ بیوروکریسی آج بھی اپنی اصل حالت میں موجود ہے جس کی وجہ سے تمام مسائل جنم لے رہے ہیں ، پشتون بحیثیت قوم مسلمان ہوئی ہے ہندوستان پر خلجی، غوری اور سوری خاندانوں کی حکومتیں دراصل پشتون اقوام کا سنہری دور رہا ہے جنہوں نے ہندوستان کو اصلاحات کی شکل میں نظام حکومت کا خاکہ دیا تھا۔

مزید : پشاورصفحہ آخر


loading...