بھارت کے ساتھ مذاکرات کی بات ڈوکلام سے افواج نکالنے کے بعد ہی ہوگی:وزارت خارجہ چین

بھارت کے ساتھ مذاکرات کی بات ڈوکلام سے افواج نکالنے کے بعد ہی ہوگی:وزارت ...
بھارت کے ساتھ مذاکرات کی بات ڈوکلام سے افواج نکالنے کے بعد ہی ہوگی:وزارت خارجہ چین

  



بیجنگ(ڈیلی پاکستان آن لائن)چین کے وزارت خارجہ کے ترجمان کا کہنا ہے کہ چین بھارت کیساتھ سرحدپر امن چاہتاہے تاہم یہ بات اس وقت تک ممکن نہیں جب تک بھارتی فوج ڈوکلام میں موجود ہے ۔

چینی وزارت خارجہ کا کہنا تھا کہ ڈوکلام میں بھارتی فوج کی غیرقانونی مداخلت پر چین کا موقف واضح ہے،بھارت لائن آف ایکیچوئل کنٹرول اور متعلقہ کنونشز کی پاسداری کرے۔لداخ میں چینی اور بھارتی افواج کی لڑائی کے حوالے سے ان کا کہنا تھا کہ وہ لداخ میں چینی اوربھارتی فوج میں جھڑپوں سے متعلق آگاہ نہیں اور نہ ہی لداخ جھڑپوں کا ڈوکلام تنازع کوئی تعلق ہے۔

یہ بھی پڑھیںبھارت،یوم آزادی کی تقریب سے واپسی کے دورا ن کمسن طالبہ زیادتی کا شکار

واضح رہے کہ بھارت اور چین کے درمیان ڈوکلام کے حوالے سے حالات کافی کشیدہ ہیں ،چائنز میڈیا کے مطا بق کے چین ڈوکلام کے متنازع علاقے سے انڈین فوجیوں کو باہر نکالنے کے لیے آئندہ دو ہفتے کے اندر انڈیا کے خلاف ’محدود نوعیت کی جنگ‘ کی تیاری کر رہا ہے۔

مزید : بین الاقوامی


loading...