ڈومیسٹک کرکٹ سے ڈیپارٹمنٹس کاکردار کو ختم کر نا ظلم ہے، باسط علی

  ڈومیسٹک کرکٹ سے ڈیپارٹمنٹس کاکردار کو ختم کر نا ظلم ہے، باسط علی

اسلام آباد(آن لائن) ڈومیسٹک کرکٹ سے ڈیپارٹمنٹس کے کردار کو ختم کرنے اور ان ڈیپارٹمنٹس میں کام کرنے والے کرکٹرز کی ملازمتوں کو لاحق خطرے کا ذکر کرتے ہوئے سابق ٹیسٹ کرکٹر باسط علی آبدیدہ ہو گئے۔ پاکستان کی طرف سے 19 ٹیسٹ میچز اور 50 ایک روزہ میچز میں نمائندگی کرنے والے 48 سالہ باسط علی نے اپنے ایک ویڈیو پیغام میں نہ صرف نئے ڈومیسٹک سسٹم کو تنقید کا نشانہ بنایا بلکہ ان قومی کھلاڑیوں سے بھی درخواست کی جو وزیر اعظم عمران خان کے نزدیک سمجھے جاتے ہیں کہ وہ وزیر اعظم سے بات کریں۔ مہنگائی کے اس دور میں بے روزگار ہونے والے کرکٹرز نہ صرف کرکٹ سے دور ہو جائیں گے بلکہ خود کشیوں پر مجبور ہو جائیں گے۔ انتہائی جذباتی انداز اور آبدیدہ ہوتے ہوئے انہوں نے کہا کہ کرکٹرز کا روزگار ختم نہیں ہونا چاہئے بلکہ پی سی بی کو ایسا نظام تشکیل دینا چاہئے کہ ڈیپارٹمنٹس کا کردار ختم نہ ہو۔

مزید : کھیل اور کھلاڑی