خطے کا امن داؤ پر لگ گیا، کشمیریوں کا آخری حد تک ساتھ دینگے: شاہ محمود 

خطے کا امن داؤ پر لگ گیا، کشمیریوں کا آخری حد تک ساتھ دینگے: شاہ محمود 

  

اسلام آباد/لاہور(مانیٹرنگ ڈیسک،نیوز ایجنسیاں) وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے پاک بھارت مذاکرات میں سب سے بڑی رکاوٹ بھارتی وزیراعظم نریندر مودی کو قرار دیدیا۔وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے نجی ٹی وی سے گفتگو کرتے ہوئے کہنا تھا کہ کشمیر میں مسلمانوں کی نسل کشی کی جا رہی ہے اور بھارت نے کشمیر کو جیل میں تبدیل کر دیا ہے۔شاہ محمود قریشی نے کہا کہ فروری میں مودی نے الیکشن جیتنے کیلئے کشیدگی کو ہوا دی۔ان کا کہنا ہے کہ مقبوضہ جموں و کشمیر میں مکمل بلیک آؤٹ ہے، کروڑوں مسلمان او آئی سی کی طرف دیکھ رہے ہیں۔انہوں نے کہا کہ ہمیں سفارتی میدان میں بہت بڑی کامیابی ملی ہے، سلامتی کونسل کا اجلاس بلانے کی خبر پر بھارت شدید اضطراب میں ہے اور وہ سلامتی کونسل کے اجلاس کی مخالفت کر رہا ہے۔وزیر خارجہ کا کہنا تھا کہ انسانی حقوق کی تنظیموں کو بھی کشمیر میں خون خرابے کو دیکھنا چاہئے۔شاہ محمود قریشی کا کہنا تھا کہ ہم نے جنگ کو کبھی ترجیح نہیں دی لیکن اگر کوئی ہم پر جنگ مسلط کرتا ہے تو ہمیں دفاع کا حق حاصل ہے، پوری قوم پاک فوج کے ساتھ شانہ بشانہ کھڑی ہے۔انہوں نے کہا کہ ہمارا کام نیک نیتی سے سلامتی کونسل میں اپنا مقدمہ پیش کرنا اور لڑنا ہے۔وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا کہ ہمارا راستہ امن کا راستہ ہے لیکن نریندر مودی خطے کے لیے خطرہ بنتا جا رہا ہے، بھارت میں بھی ایک بہت بڑا طبقہ مودی کی سوچ سے متنفردکھائی دے رہا ہے۔بعدازاں لاہور میں یوم سیاہ ریلی سے خطاب کرتے ہوئے شاہ محمود قریشی نے کہا کہ دنیا کو مقبوضہ کشمیر کے معاملے پر کردار ادا کرناہوگا، اس وقت خطے کا امن داؤ پر لگ گیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ میں نے امریکہ سے کہہ دیا تھا کہ وزیر اعظم اور پاکستان کے عوام افغانستان کا امن دیکھنا چاہتے ہیں لیکن ہمیں لگتاہے کہ اس کیخلاف کوئی سازش ہورہی ہے اور میں نے اس پر سفارتی سطح پر احتجاج ریکارڈ کروایا۔وزیر خارجہ نے کہا کہ پاکستان نے فیصلہ کیاہے کہ ہم سفارتی، قانونی اور اخلاقی محاذ پر مقابلہ کریں گے اور کشمیریوں کا آخری حد تک ساتھ دیں گے۔ ریلی سے خطاب کرتے ہوئے وزیر اعلی پنجاب عثمان بزدار نے کہا کہ آئندہ یوم آزادی کشمیر ی ہمارے ساتھ منائیں گے،پنجاب کے ہر ضلع میں ایک شاہراہ کو کشمیر سے منسوب کیا جائے گا جبکہ9پارک کشمیر سے منسوب کئے جائیں گے۔ انہوں نے کہا کہ عالمی برادری مقبوضہ کشمیر میں بھارتی مظالم کا نوٹس لے۔عثمان بزدار نے اس موقع پر کشمیر بنے کا پاکستان کے نعرے بھی لگائے اور کہا کہ ہر ہفتے احتجاجی ریلی نکالنے کا سلسلہ جاری رہے گا۔انہوں نے کہا کہ پاکستان کشمیریوں کی اخلاقی اور سفارتی امداد ہر صورت جاری رکھے گا۔اس موقع پرحریت رہنما یٰسین ملک کی اہلیہ مشعال ملک نے کہا ہے کہ پاکستان اور کشمیریوں کا رشتہ خون کا نہیں روح کا رشتہ ہے۔موجودہ حالات میں ہمیں پاکستان کی بہت ضرورت ہے۔ مشعال ملک نے کہا کہ ہمیں کوئی ووٹ نہیں چاہیے ہمیں کوئی کچھ نہیں چاہیے ہمیں کوئی اور لالچ نہیں ہے ہمیں آواز چاہیے اگر پاکستان کا بچہ بچہ، نوجوان اور بزرگ چاہتا ہے کہ اس خطے کے اندر امن ہو تو کشمیریوں کی آواز بنو۔ 

شاہ محمود/عثمان بزدار

مزید :

صفحہ اول -