زندہ قومیں اپنے قومی تہواروں کو شایان شان طریقے سے مناتی ہیں:طارق محمود

  زندہ قومیں اپنے قومی تہواروں کو شایان شان طریقے سے مناتی ہیں:طارق محمود

  

ڈیرہ اسماعیل خان(بیورورپورٹ)زندہ قومیں اپنے قومی تہواروں کو شایان شان طریقے سے مناتی ہیں جس کی مثال آج آپ سب کا سبز ہلالی پرچم اپنے سینوں پر سجائے اور اپنے ہاتھوں میں پیارے ملک پاکستان کے جھنڈے اٹھا ئے نظر آرہی ہے۔ ہمارا یہ پیارا ملک پاکستان بزرگوں کی قربانیوں اور محنت کے بعد معرض وجود میں آیا۔ آزادی ملک میں رہنا اللہ پاک کی نعمتوں میں سے ایک نعمت ہے۔ہمیں چاہئے کہ ہم اپنے ملک سے پیار کریں اور اس کی حفاظت اور ترقی کیلئے ہر لمحہ ہر وقت کوشاں رہیں۔ ان خیالات کا اظہار رجسٹرا ر گومل یونیورسٹی طارق محمود نے جشن یوم آزادی 14اگست اور یوم یکجہتی کشمیرکے حوالے سے منعقدہ تقریب میں کیا۔ اس موقع پر سٹی کوارڈینیٹر پروفیسر ڈاکٹر صلاح الدین سمیت مختلف شعبہ جات کے ڈین، سربراہان، اساتذہ، ایڈمنسٹریشن افسران، ملازمین، صحافی, طلباء  اور بچوں کی بڑی تعداد نے شرکت کی۔تقریب کا آغاز میں سائرن بجا گیا جس کے فورا بعد پرچم کشائی ہوئی اور قومی ترانہ پڑھا گیا۔ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے رجسٹرار طارق محمود نے کہا کہ آج کا دن ہم نہ صرف آزادی بلکہ اپنے کشمیری بہن بھائیوں سے اظہار یکجہتی کے طور پر بھی منا رہے ہیں۔جہاں انڈیا نے ظلم و بربریت کی انتہاء  کر دی ' ہماری کشمیری بہنوں کی عزتیں لوٹی جا رہی ہیں،جوانوں کو شہیدکیا جا رہا ہے۔رجسٹرا ر نے کہا کہ کشمیر ی کی آزادی تک ہم سارے کشمیر ی عوام کے ساتھ ہیں۔آج ہندوستان کو یہ بتانا چاہتا ہوں کہ پہلے ہم کہتے تھے کہ کشمیر بنے گا پاکستان اور آج سے اسکے ساتھ یہ کہیں گے کہ ہندوستان بنے گا پاکستان۔یونیورسٹی کے طلباء  نے جشن آزادی اور یوم یکجہتی کشمیر کے حوالے سے بھی تقاریرکیں۔ تقریب کے اختتام پر پاکستان کی آزادی کے حوالے سے کیک بھی کاٹا گیا۔ گومل یونیورسٹی میں جشن آزادی کے حوالے سے صبح قرآن خوانی کا اہتمام بھی کیا گیا اورپاکستان کی سلامتی و ترقی اورپاک فوج'پولیس' سیکیورٹی اداروں 'عوام کاقیام امن کیلئے اپنی جانوں کا نظر انہ دینے والوں کے ایصال ثواب کے لئے دعا بھی کی گئی۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -