پروگرام ریڈیو کلینک میں ماہر امراض جوڑ پروفیسر ڈاکٹر یاسر عمران شریک

پروگرام ریڈیو کلینک میں ماہر امراض جوڑ پروفیسر ڈاکٹر یاسر عمران شریک

  

لاہور(فلم رپورٹر)پروگرام ریڈیو کلینک میں ماہر امراض جوڑ پروفیسر ڈاکٹر یاسر عمران اور آرتھوپیڈک سرجن پروفیسر ڈاکٹر کامران بٹ کی شرکت،پروگرام کا موضوع جوڑوں کے امراض اور ان کا علاج  تھا، میزبان اور پروڈیوسر مدثر قدیر تھے۔پروگرام کے پہلے حصے میں بات کرتے ہوئے ریماٹالوجسٹ پروفیسر ڈاکٹر یاسر عمران کا کہنا تھا کہ جوڑوں کے امراض سنگین بیماری ہے اور یہ وراثتی طور پر بھی منتقل ہوسکتے ہیں ان امراض کی وجہ قوت مدافعت میں کمی اور ماحولیاتی فیکٹر بھی ہے،گنٹھیا کا مرض اس حوالے سے بڑا اہم ہے اور طبی ماہر کو چاہیے اس کی تشخیص جلد از جلدکرئے تاکہ مرض کے پھیلنے کی شدت کو کم کیا جاسکے،مریض کی فزیکل تھراپی،وٹامن ڈی کی کمی،شوگر کے کنٹرول اور ادویات کے استعمال سے اس بیماری کو قابو کیا جاسکتا ہے۔

جبکہ پروگرام کے آخری حصے میں بات کرتے ہوئے قومی کرکٹ ٹیم کے ساتھ انگلینڈ میں مقیم آرتھوپیڈک سرجن پروفیسر ڈاکٹر کامران بٹ نے بزریعہ سوشل میڈیا پروگرام میں شمولیت کرتے ہوئے کہا کہ ریماٹالوجی کے امراض میں انسانی ہڈیاں ذیادہ کمزور ہوجاتی ہیں ان کے جوڑوں میں شدید سوزش کے باعث ہڈیوں کی توڑ پھوڑ کاعمل اور ان کے ٹوٹنے کا اندیشہ بھی بڑھ جاتا ہے اور جو انسانی جوڑ خراب ہوجاتے ہیں ان کی پیوند کاری کرنا پڑتی ہے تاکہ یہ ہڈیوں کو نقصان نہ پہنچائیں اس ضمن میں آرتھوپیڈک سرجن کے ساتھ انستھزیا کے ڈاکٹر کی مہارت بھی ضروری ہے جس نے مریض کو آپریشن کے لئے اوکے کرنا ہوتا ہے کیونکہ ریماٹالوجی کے مریض عام مریضوں سے الگ ہوتے ہیں ان میں بیماری کے خلاف لڑنے کی صلاحیت کم ہوتی ہے اور ان کے زخم کے بھرنے کی رفتار اور آپریشن کے کامیاب ہونے کے اثرات بھی آہستہ آہستہ سامنے آتے ہیں۔  

مزید :

کلچر -