پنجاب کے 455بلدیاتی اداروں کی نیبر ہڈ اور ویلج کونسلز کی آبادی،نشستوں کا فارمولہ طے

پنجاب کے 455بلدیاتی اداروں کی نیبر ہڈ اور ویلج کونسلز کی آبادی،نشستوں کا ...

  

 لاہور (دیبا مرزا) صو بہ پنجا ب میں بلدیا تی انتخا با ت کا انعقاد جلد کروانے کے لئے تیا ریا ں زور پکڑنے لگیں۔بلدیاتی ایکٹ 2019 کے تحتمیٹروپولیٹن کارپوریشن لاہور سمیت صوبہ بھر کے 455 بلدیاتی اداروں کی نیبرہڈ کونسلز اور ویلج پنچایت کونسلز کی آبادی اور نشستوں کے تناسب کا فارمولا طے کر لیا گیا جس میں نیبرہڈ کونسل کی زیادہ سے زیادہ آبادی 45 ہزار جبکہ کم سے کم 6 ہزارتک ہوگی، ویلج پنچایت کونسلز کی زیادہ سے زیادہ آبادی 25 ہزار جبکہ کم سے کم آبادی 2 ہزار تک ہوگی، شہری علاقوں میں نیبرہڈ کونسلز جبکہ دیہی علاقوں میں ویلج پنچایت کونسلز تشکیل پائیں گی۔،نیبرہڈ کونسل کی کم سے کم آبادی 6 ہزارجبکہ زیادہ سے زیادہ 45 ہزارتک ہوگی۔ جبکہ میٹرو پولیٹن کارپوریشن لاہور کو مکمل شہری علاقہ قرار دیا گیا ہے، شہر میں 475 نیبر ہڈ بنائی جاری ہیں، 20 ہزار سے 45 ہزار آبادی پر مشتمل نیبرہڈ کونسلز میں 5 جنرل کونسلرز، 2 خواتین اور ایک اقلیتی نشست ہوگی، 13 ہزار سے 20 ہزار آبادی والی نیبرہڈ کونسلز میں 4 جنرل کونسلرز، ایک خاتون کونسلر اور اقلیتی کونسلر منتخب ہوسکے گا، 6 ہزارسے  13ہزار آبادی والی نیبرہڈ کونسلز میں 3 جنرل کونسلرز، ایک خاتون کونسلر جبکہ ایک اقلیتی کونسلر کی نشست رکھی گئی ہے۔ 6 ہزار تک کی آبادی والی نیبرہڈکونسلز میں 2 جنرل کونسلرایک خاتون جبکہ ایک اقلیتی کونسلرکی نشست رکھی گئی ہے 25 ہزارتک ویلج پنچایت کونسلز 5 جنرل کونسلرز، 2 خواتین جبکہ ایک اقلیتی کونسلر کی نشست ہوگی،8 سے 15 ہزار آبادی والی ویلج پنچایت کونسلزمیں چار کونسلرز، ایک خاتون،ایک اقلیتی منتخب ہوسکے گا، 2 ہزار سے 8 ہزار آبادی والی نیبرہڈ کونسلز میں 3 جنرل کونسلرز، ایک خاتون جبکہ ایک اقلیتی سیٹ ہوگی، 2 ہزار تک آبادی والی نیبرہڈ کونسلز میں 2 جنرل کونسلرز، ایک خاتون جبکہ ایک اقلیتی سیٹ ہوگی۔ہر ووٹر تین ووٹ کاسٹ کرے گا، ایک جنرل کونسلر، ایک خاتون جبکہ ایک ووٹ اقلیتی کونسلر کو کاسٹ کرنا ہوگا، جنرل کونسلرز میں سب سے زیادہ ووٹ لینے والا ازخود چیئرمین منتخب ہوجائے گا۔واضح رہے کہ الیکشن کمیشن کی جانب سے بلدیا تی انتخا با ت کے لئے حلقہ بندیو ں کا کام تیزی سے جا ری ہے جس میں سے پچا س فی صد تک حلقہ بندیو ں کا کام مکمل کر لیا گیا ہے۔

بلدیاتی انتخابات

مزید :

صفحہ اول -