ملک میں پٹرولیم قیمتیں اور افراط زر مہنگائی بڑھنے کی بڑی وجوہات ہیں:ماہرین

ملک میں پٹرولیم قیمتیں اور افراط زر مہنگائی بڑھنے کی بڑی وجوہات ہیں:ماہرین

  

 لاہور (لیڈی رپورٹر) ملک کے ممتا ز معا شی ماہر ین طا ہر پرویز، عبد البا سط، ملک سلمان، نعمان کبیر نے وزیر اعظم کے بیان ”کہ آئی پی پی سے معا ہدوں کے بعد بجلی سستی ہو جا ئے گی“ پر ردعمل دیتے ہو ئے کہا ہے کہ اگر ایسا ہو جا تا ہے تو یہ ایک خوش آئند اقدا م ہو گا لیکن اس وقت ملک کی معیشت کو فوری طور پر بحا لی کی طرف لے جا نے کی ضرورت ہے۔ ملک کے تما م صنعتی شعبے اس وقت برے حا لا ت کا شکا ر ہیں۔ گزشتہ ماہ پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں 65 فیصد سے زیادہ ریکارڈ اضافہ کیا گیا تھا جس کی وجہ سے جولائی میں مہنگائی کی شرح 9.30 فیصد تک پہنچ گئی تھی۔ انہو ں نے کہا کہ افراط زر کی شرح 6 فیصد سے بڑھ کر معاشی نمو کو نقصان پہنچا سکتی ہے۔ پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافہ سے صنعتی شعبہ متاثر ہورہا ہے۔پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافہ کو جواز بنا کر فیول ایڈجسٹمنٹ کی مد میں بجلی مزید مہنگی کرکے عوام پر مزید بوجھ ڈالا جائے گا۔ تیل کی قیمتیں اور افراط زر کا آپس میں گہرا تعلق ہے۔ جیسے جیسے ایندھن کی قیمتیں بڑھ رہی ہیں، افراط زر جو پوری معیشت میں عمومی قیمت کے رجحانات کا پیمانہ ہے، اسی سمت اوپر کی طرف جاتا ہے۔انہوں نے حکومت پر زور دیا کہ وہ افراط زر کو دور کرنے کے لئے ٹھوس اقدامات کرے۔ مہنگی بجلی کے با عث پو لٹری کا شعبہ،صنعتی شعبہ اور دیگر تما م شعبہ بری طرح متاثر ہورہے ہے اور مہنگی پٹرولیم مصنوعات کے باعث بجلی کی قیمتوں میں بھی اضافہ متوقع ہے۔

 ماہرین

مزید :

صفحہ آخر -