افغان صوبہ کنٹر اور بدخشاں میں جھڑپیں،5طالبان،2پولیس اہلکار ہلاک،3زخمی

افغان صوبہ کنٹر اور بدخشاں میں جھڑپیں،5طالبان،2پولیس اہلکار ہلاک،3زخمی

  

 اسد آباد،فیض آباد(شِنہوا)افغانستان میں سیکورٹی فورسز کی کارروائیوں میں 5عسکریت پسند ہلاک اور3زخمی ہوگئے جبکہ طالبان کے حملے میں 2پولیس اہلکار مارے گئے۔صوبائی پولیس کے ترجمان فرید دہقان نے ہفتہ کے روز بتایا کہ مشرقی صوبہ کنڑ کے ضلع مراوڑا میں طالبان عسکریت پسندوں کے سکیورٹی چوکیوں پر دھاوے میں 2 پولیس اہلکار مارے گئے ہیں۔ طالبان عسکریت پسندوں کے ایک گروہ نے ہفتہ کو علی الصبح ضلع مراوڑا کے کچھ حصوں میں قائم سیکورٹی چوکیوں پر حملہ کیا لیکن پولیس کی جانب سے مزاحمت کے بعد وہ فرار ہو گئے۔ ادھر افغانستان کے شمالی صوبے بدخشاں کے شورش زدہ ضلع کوفاب میں حکومتی افواج کی کارروائیوں کے دوران 5باغیوں کی ہلاکت اور دیگر 3کے زخمی ہونے کی تصدیق ہوئی ہے۔عہدیدار نے بتایا کہ ضلع کے عسکریت پسندوں سے پاک ہونے تک کریک ڈان جاری رہے گا۔اہلکار کے مطابق جمعہ کے روز صوبہ بدخشاں کے مختلف حصوں میں 10مزید عسکریت پسندوں کو ہلاک کیا گیا تھا۔شورش زدہ صوبہ بدخشاں کے کچھ حصوں میں سرگرم عمل طالبان عسکریت پسندوں نے ابھی تک اس پر کوئی تبصرہ نہیں کیا ہے۔

جھڑپیں 

مزید :

صفحہ آخر -