جندول تھانہ خال کے حدود میں دوشیزہ کے قتل کا ڈراپ سین، بھانجا قاتل نکلا

جندول تھانہ خال کے حدود میں دوشیزہ کے قتل کا ڈراپ سین، بھانجا قاتل نکلا

  

جندول(نمائندہ پاکستان)جندول تھانہ خال کے حدود میں دوشیزہ کے قتل کا ڈراپ سین، بھانجا قاتل نکلا۔ایک ملزم آلہ قتل سمیت گرفتار دوسرے ملزم کی گرفتاری کیلئے چھاپے مارے جا رہے ہیں۔ تھانہ خال کے ایس ایچ او مہران شاہ کے مطابق 11اگست کو لڑم ٹاپ سمیل کنڈاوں پر قتل شدہ خاتون کی لاش پولیس کو موصول ہوئی تھی جس کے بعد پولیس نے نامعلوم ملزمان کے خلاف زیر دفعہ44cpa/324/302علت128 درج کرلیا تھا۔13اگست کو ضلعی پولیس آفیسر عبد الرشیدخان کے ہدایات کی روشنی میں پولیس نے اندھے قتل کا سراغ لگاتے ہوئے ملزم ندیم ولد جھان زیب اور مروان ولد مسافر ساکنان رباط درہ کو ٹریس کرلیا  اور ملزم ندیم کو گرفتار کرتے ہوئے اس کی نشاندہی پر آلہ قتل پستول،وقوعہ میں استعمال شدہ موٹر کار،نوکیا موبائل فون اور مقتولہ کے ملکیتی 1550روپے نقد برآمد کر لئے۔پولیس کے مطابق انہیں دوران تفتیش معلوم ہوا کہ مقتولہ کیساتھ اپنے دو بچے احمد عمر5سال اور معذور بچی عمر 6یا7سال تھیں جن میں سے ملزمان نے پانچ سالہ احمد کے سر پر گولی مار کر شدید زخمی کیا تھا تاہم وہ اللہ کے رحم سے بچ گیا تھا جبکہ معذور بچی کو سنسان ویران جنگل میں بے دردی سے پھینک کر ملزمان فرار ہو گئیں تھے۔پولیس کے مطابق مفرور ملزم مروان کی گرفتاری کیلئے سرتوڑ کوششیں جاری ہیں۔ضلعی پولیس آفیسر عبد الرشید خان کے مطابق خواتین کیساتھ جاری مظالم کے سلسلہ میں ٹھوس اقدامات اٹھائیں جا رہے ہیں انہوں نے کہا کہ جہاں کہیں بھی خواتین کیساتھ ظلم کے بارے میں اطلاع ملیں فوری پولیس کو بتائیں اور اگر متعلقہ تھانہ پولیس کاروائی کرنے میں سست روی کریں تو فوری ان کیساتھ رابطہ کیا جائے فوری کاروائی ہوگی۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -