دورہ انگلینڈ ، قومی ٹیم کے وکٹ کیپر بیٹسمین محمد رضوان نے تنقید کو ہوامیں اڑا دیا 

دورہ انگلینڈ ، قومی ٹیم کے وکٹ کیپر بیٹسمین محمد رضوان نے تنقید کو ہوامیں اڑا ...
دورہ انگلینڈ ، قومی ٹیم کے وکٹ کیپر بیٹسمین محمد رضوان نے تنقید کو ہوامیں اڑا دیا 

  

لاہور(ڈیلی پاکستان آن لائن ) قومی ٹیم کے وکٹ کیپر بیٹسمین محمد رضوان نے کھیل پرتنقید کو ہوا میں اڑاتے ہوئے کہا کہ اللہ مجھے اور ناقدین کو بھی ہدایت دے۔

ساوتھمپٹن ٹیسٹ کے دوسرے روز محمد رضوان نے مشکل صورتحال میں ناقابل شکست 60 رنز بنائے، دورئہ آسٹریلیا میں 95 رنز کی اننگز کھیلنے کے بعد قابل ذکر کارکردگی نہ دکھا پانے والے وکٹ کیپر بیٹسمین کو تنقید کا نشانہ بنایا جا رہا تھا کہ سرفراز احمد کو ڈراپ کرنے کے بعد انھوں نے کون سا بہترین پرفارم کر دیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ میرے سامنے گراونڈ ہے، میں محنت کرتا اور نتیجہ اللہ پر چھوڑ دیتا ہوں، یہ نہیں سوچتا کہ میرے بارے میں کیا کہا جاتا ہے، اللہ مجھے اور ناقدین کو بھی ہدایت دے۔انھوں نے کہا کہ میں مصباح الحق اور یونس خان سے رہنمائی لیتا رہا، خاص کر ان سے یہ مشورہ لے رہا تھا کہ نئی گیند لیے جانے کی صورت میں ٹیل اینڈرز کے ساتھ کس طرح کھیلنا چاہیے، دراصل میں ڈومیسٹک کرکٹ میں ٹاپ آرڈر جبکہ انٹرنیشنل میں ٹیل اینڈرز کے ساتھ کھیلتا آرہا ہوں،یہی تجربہ کام آیا، میں کبھی نہیں کہوں گا کہ مجھے اوپر کے نمبر پر بیٹنگ کے لیے بھیجیں، جو بھی کردار دیا جائے اس کے مطابق کھیلوں گا۔

انھوں نے کہا کہ اس اننگز میں کنڈیشنز بہت مشکل تھیں لہٰذا ٹیل اینڈرز کے ساتھ بیٹنگ چیلنج رہی، پہلے سے لے کر 75 ویں اوورز تک سیمنگ کنڈیشنز اپنے کیریئر میں پہلی بار دیکھیں، بابراعظم کے آوٹ ہونے کے بعد حکمت عملی تبدیلی کرتے ہوئے تیزی سے رنز بنانا پڑے، صورتحال کے مطابق بیٹنگ کی۔ انھوں نے کہا کہ کھیل بار بار رکنے کی وجہ سے توجہ منتشر ہوتی ہے لیکن انٹرنیشنل کرکٹ میں آپ کو ہر طرح کے چیلنج کے لیے تیار رہنا پڑتا ہے۔

مزید :

کھیل -