قضائے حاجت کیلئے گئی لڑکی ریپ کے بعد قتل ، درندوں نے جسم کے اہم حصے ہی کاٹ ڈالے 

قضائے حاجت کیلئے گئی لڑکی ریپ کے بعد قتل ، درندوں نے جسم کے اہم حصے ہی کاٹ ...
قضائے حاجت کیلئے گئی لڑکی ریپ کے بعد قتل ، درندوں نے جسم کے اہم حصے ہی کاٹ ڈالے 

  

لکھنو (ڈیلی پاکستان آن لائن) بھارتی ریاست اترپردیش کے ضلع لکھیم پور کھیری کے حلقہ عیسی نگر تھانہ  کے پکریا گاوں میں کھیتوں میں رفع حاجت کرنے گئی لڑکی کو اغوا  کے بعد جنسی زیادتی کا نشانہ بنا کر قتل کردیا گیا، اہلخانہ کے مطابق جنسی درندوں نے لڑکی کی آنکھیں پھوڑ کر زبان بھی کاٹ ڈالی۔

بھارتی میڈیا کے مطابق 14 اگست کو  13 سالہ لڑکی قضائے حاجت کیلئے گئی تھی لیکن دیر شام تک لڑکی جب گھر واپس نہیں آئی تو اہل خانہ نے لڑکی کی تلاش شروع کی  لیکن ناکامی پرپولیس کو اس کی اطلاع دی ۔ پولیس نے جب لڑکی کی تلاش کی تو دیر شام لڑکی کی لاش ایک گننے کے کھیت میں ملی ۔ 

اہل خانہ کا الزام ہے کہ لڑکی کی اجتماعی آبروریزی کے بعد حیوانوں نے اس کی آنکھیں پھوڑ دیں ۔ اس کی زبان بھی کاٹ ڈالی اور پھر گلا گھونٹ کر اس کو مار ڈالا ۔ پولیس نے اہل خانہ کی تحریر کی بنیاد پر دو نوجوانوں کو گرفتار کرکے جیل بھیج دیا ہے  اور  بتایا کہ پوسٹ مارٹم رپورٹ میں آبروریزی کی تصدیق ہوئی ہے تاہم  رپورٹ میں آنکھ پھوڑنے اور زبان کاٹنے کا کوئی ذکر نہیں ۔

نیوز 18 کے مطابق ایس پی ستیندر کمار نے بتایا کہ مقدمہ درج کر لیا گیا،  پوسٹ مارٹم رپورٹ کی بنیاد پر مقدمہ میں آبروریزی کی دفعات لگائی گئی ہیں اور قصورواروں کے خلاف این ایس اے کی کارروائی کی جارہی ہے ۔ ایس پی نے بتایا کہ لڑکی کی آنکھیں نہیں پھوڑی گئی ہیں ، گنے کا پتہ لگنے سے آنکھوں میں زخم ہوگیا  ۔

مزید :

جرم و انصاف -