چیمبر آف سمال ٹریڈرز اینڈ سمال انڈسٹریز کوقانونی قرار د یدیا گیا

چیمبر آف سمال ٹریڈرز اینڈ سمال انڈسٹریز کوقانونی قرار د یدیا گیا

 فیصل آباد(آن لائن) وفاقی وزرات صنعت وتجارت نے اسلام آباد ،فیصل آباد سمیت ملک میں بھر میں چیمبر آف سمال ٹریڈرز اینڈ سمال انڈسٹریز کوقانونی قرار دیتے ہوئے چیمبر ٓف کامرس اینڈ انڈسٹری کی چیمبر آف سمال ٹریڈرز اینڈ سمال انڈسٹریز کے خلاف اپیل کی درخواست کو مسترد کر دیا آن لائن کے مطابق فیصل آباد ،سرگودھا ،سیالکوٹ ، پشاور،کو ئٹہ اور اسلام آباد میں اس وقت د چیمبر آف سمال ٹریڈرز اینڈ سمال انڈسٹریز کے ادارے حکومت کی اجازت سے کا م کر ے رہے ہیں جبکہ ان کے خلافاسلام آباد چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کے سینئر نائب صدر خالد چوہدری کی اسلام آباد چیمبر آف سمال ٹریڈرز اینڈ سمال انڈسٹریز کے خلاف اپیل کی درخواست اسلام آباد ہائی کورٹ اور سپریم کورٹکے بعد منسٹری آف کامرس دی ہو ئی تھی ،جس پر گذشتہ روزوفاقی وزرات صنعت وتجارت نے فیصلہ دیتے ہوئے چیمبر آف سمال ٹریڈرز اینڈ سمال انڈسٹریز کو قانونی طور پر لائسنس یافتہ ادارہ قرار دے دیا ۔ بتایا گیا ہے کہ خود ساختہ آئی سی ٹی چیمبرآف سمال ٹریڈرز نے ہائی کورٹ اور سپریم کورٹ آفپاکستان کے فیصلے کو نامنظور کرتے ہوئے سیکرٹری کامرس محمد شہزاد ارباب کے پاس اپیل دائر کرتے ہوئے کہا تھا کہ اسلام آباد چیمبر آف سمال ٹریڈرز اینڈ سمال انڈسٹریز کا لائسنس غیر قانونی طور پر دیا گیا اور ہمارا موقف سنے بغیر ہی فیصلہ سنا دیا گیا۔جبکہ لائسنس کے حصول کیلئے درخواست ہم نے بھی دی تھی۔

 اس کے جواب میں ڈی جی ٹی او نے موقف اختیار کیا کہ اسلام آباد چیمبر آف سمال ٹریڈرز اینڈ سمال انڈسٹریز کو ٹریڈ آرگنائزیشن ایکٹ 2013 کے مطابق©"پہلے آﺅ پہلے پاﺅ" کی بنیاد پر لائسنس دیا گیا۔دونوں درخواست گزاروں کو مورخہ 03/10/2013 لیٹر نمبر 4172/2013 کے زریعے مطلع کر دیا گیا تھا ۔لیکن نام نہاد آئی سی ٹی چیمبر کے نوٹس کے باوجود رابطہ نہ کیا اور نہ ہی فیصلے کے خلاف مقررہ مدت میں اپیل دائر کی۔اب جبکہ اسلام آبا دہائی کورٹ نے بھی پٹیشن نمبر 621/2014میں اسلام آباد چیمبر آف سمال ٹریڈرز اینڈ سمال انڈسٹریز کو قانونی طور پر لائسنس یافتہ قرار دے دیا اور سپریم کورٹ آف پاکستان نے بھی اپیل کی درخواست کو خارج کر دیا ایسی صورت میں منسٹری آف کامرس میں اپیل دائر کرنے کا کوئی جواز باقی نہیں رہ جاتا۔سیکرٹری کامرس نے فیصلے کی وضاحت کرتے ہوئے کہا کہ اسلام آباد چیمبر آف سمال ٹریڈرز اینڈ سمال انڈسٹریز کا لائسنس ٹریڈ آرگنائزیشن ایکٹ 2013سیکشن 3(2)(f) کے تحت دیا گیا اور اس چیمبر کی تمام کاروائی ٹریڈ آرگنائزیشن ایکٹ 2007کی بھی عکاسی کرتی ہے لہٰذا ڈی جی ٹی او کا فیصلہ درست اور قانونی ہے۔اس بنیاد پر اپیل کی درخواست مسترد کی جاتی ہے اور اسلام آباد چیمبر آف سمال ٹریڈرز اینڈ سمال انڈسٹریز کو مکمل طور پر قانونی حیثیت دی جاتی ہے ۔اسلام آباد چیمبر آف سمال ٹریڈرز اینڈ سمال انڈسٹریزکے صدر محمد کامران عباسی نے سیکرٹری کامرس کے فیصلے کو تریخی قرار دیا اور کہا کہ نام نہاد تاجرنمائندوں کی جانب سے تاجر برادری کے مینڈیٹ کے خلاف نفاق ڈالنے کیلئے جو سازش تیار کی گئی تھی آج وہ اپنے منطقی انجام کو پہنچ چکی ہے۔سیکرٹری کامرس کے تاریخی فیصلے سے انصاف اور قانون کی فتح ہوئی ہے۔ اسلام آباد کی تاجر برادری مستقبل میں متحد ہو کر ملکی معیشیت میں اپنا مضبوط کردار ادا کرے گی۔#/s#

مزید : کامرس