ہاسٹل میں مقیم طلبہ زیادہ نشے کے قریب ہو رہے ہیں،ڈاکٹر ظفر اقبال میاں

ہاسٹل میں مقیم طلبہ زیادہ نشے کے قریب ہو رہے ہیں،ڈاکٹر ظفر اقبال میاں

 لاہور(پ ر)نوجوانوں میں نشے کا بڑھتا ہوا رجحان اور والدین کی ذمہ داریاں،گلوبل NGOکے زیر اہتمام گلوبل ری ہیب سنٹر میں مجلس مذاکرہ سے گفتگو کرتے ہوئے گلوبل NGOکے چیئر مین و ایگزیکٹو ڈائریکٹر ڈاکٹر ظفر اقبال میاں نے نوجوانوں میں نشے کے بڑھتے ہوئے رجحان اور والدین کی ذمہ داریوں کے حوالے سے گفتگو کی ۔انہوں نے کہا کہ والدین سے بچوں کی دوری بھی نشے کے بڑھنے کا سبب بن رہی ہے۔ والدین اور بچوں کے درمیان رابطے کے فقدان کی کمی اور والدین کی بچوں پر توجہ کم ہونے سے نوجوان نسل نشہ جیسی لعنت میں مبتلا ہو رہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ گلوبل رہیب پروگرام کے تحت ضلع لاہور میں کئے گئے سروے میں یہ بات سامنے آئی ہے کہ ہوسٹل میں مقیم طلبہ و طالبات نشے میں مبتلا ہو کر اپنا روشن مستقبل تباہ کر رہے ہیں جن سے ان کے والدین لاعلم ہیں۔اس پروگرام میں گلوبل دی ہیب پروگرام کے چیئر مین ڈاکٹر ظفر اقبال میاں،وائس چیئرمین انیس الرحمان بٹ ،ڈائیریکٹر پروگرام فرحان خان،سائیکالوجی کونسل کی ہیڈ بینش مبین،سائیکو تھراپی سنٹر کی انچارج عدیلہ صبا،سائیکولوجی و ذہنی سنٹر کی انچارج ارم شہزادی، ایڈ یشن سنٹر کے انچارج ڈاکٹر شفیق انجم ، سیکرٹری انفارمیشن ڈاکٹر افضل میو کے علاوہ گلوبل دی ہیب پروگرام کے ایگزیکٹو نے بھی شرکت کی۔

مزید : میٹروپولیٹن 1