چین کا ہائپر سونک وہیکل تجربہ،امریکہ کے میزائل شکن نظام کا توڑ ڈھونڈ نکالا

چین کا ہائپر سونک وہیکل تجربہ،امریکہ کے میزائل شکن نظام کا توڑ ڈھونڈ نکالا

بیجنگ(نیوزڈیسک)چین نے حال ہی میں ہائپر سونک وہیکل تجربہ کیا ہے جو اس بات کا اشارہ دے رہا ہے کہ وہ الٹرا ہائی سپیڈ پر کام کررہا ہے اور اس نے امریکہ کی میزائل شیلڈ کو ناکارہ بنا دیا ہے۔چین کی وزارت دفاع نے اس بات کی تصدیق کرتے ہوئے کہا ہے کہ یہ تجربات چین کے نیوکلئیر پروگرام کو بہتر بنانے کی جانب ایک اہم قدم ہے۔ماہرین کا کہنا ہے کہ اس ٹیکنالوجی میں مہارت کے بعد چین باآسانی امریکہ کے میزائل سسٹم پر قابو پا سکتا ہے۔ ان تجربات کے بعد امریکی انتظامیہ میں بہت تشویش بھی پائی جا رہی ہے۔روسی نیوز ایجنسی کا کہنا ہے کہ WU-14نامی یہ وہیکل ایک انٹر کانٹینٹل بالسٹک میزائل کے ذریعے لانچ کیا گیااور یہ خلاءکے اوپری حصہ میں میزائل سے علیحدہ ہواجہاں سے اس نے زمین کی جانب سفر شروع کیا، اس کی سپیڈ آواز کی رفتار سے دس گنا زیادہ تھی اور قریباً12,800کلومیٹر کی رفتار سے زمین پر پہنچا۔ماہرین کا کہنا ہے کہ یہ رفتار انٹی میزائل سسٹم کو ناکارہ بنانے کے لئے کافی ہے۔تجزیہ کار اس تجربے کو دفاعی میدان میں چین کی اہم کامیابی قرار دے رہے ہیں۔

مزید : صفحہ آخر