سولہ دسمبرکئی سبق سکھا گیا،سقوط ڈھاکاکوآج تینتالیس سال ہوگئے

سولہ دسمبرکئی سبق سکھا گیا،سقوط ڈھاکاکوآج تینتالیس سال ہوگئے
سولہ دسمبرکئی سبق سکھا گیا،سقوط ڈھاکاکوآج تینتالیس سال ہوگئے

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک)سقوط ڈھاکا کو تینتالیس برس گزرگئے ہیں لیکن پاکستان کیوں دولخت ہوا ؟ ۔حکمرانوں کا طرز عمل کہیں یا مشرقی بازو کو سیاسی اور انتظامی امور میں حصہ نہ ملنا اور بات شیخ مجیب کے ان چھ نکات تک جاپہنچی جنہوں نے پاکستان کی تاریخ پر سیاہ دھبہ لگا دیا۔

انیس سو ستر کے انتخابات میں عوامی لیگ کو اکثریت ملی لیکن اسے حکومت نہ مل سکی اورپرتشدد مظاہروں پر حالات مزید بگڑ گئے۔دشمن نے بھی اس کا پورا فائدہ اٹھاتے ہوئے جنگی عزائم کو عملی جامہ پہنایا اور پاکستان پر جنگ مسلط کر دی جو سقوط ڈھاکہ پی ختم ہوئی ۔

تجزیہ کار کہتے ہیں تاریخ سکھاتی ہے کہ سیاسی اور انتظامی فیصلوں میں غلطیوں سے بچاجائے تو ایسے سانحات سے بچاجاسکتا ہے۔

 

 

 

مزید : بین الاقوامی /اہم خبریں