واپڈا اور چائنا ریلوے فرسٹ گروپ کے درمیان معاہدہ

واپڈا اور چائنا ریلوے فرسٹ گروپ کے درمیان معاہدہ

لاہور(کامرس رپورٹر)واپڈا اور چائنا ریلوے فرسٹ گروپ کے درمیان داسو ہائیڈرو پاور پراجیکٹ کے متاثرین کی آبادکاری کیلئے تین سائٹس اور شتیال میوزیم کی تعمیر کیلئے معاہدے پر دستخط کئے گئے۔ معاہدے کی مالیت 571.95 ملین روپے ہے۔ مذکورہ کنٹریکٹ چوچنگ گاؤں سے تعلق رکھنے والے پراجیکٹ متاثرین کی آبادکاری کیلئے 3 سائٹس اورشتیال کے مقام پر تاریخی چٹانوں کو محفوظ بنانے کیلئے میوزیم کی تعمیر پر مشتمل ہے۔ کنٹریکٹ کو تقریباً ڈیڑھ سال کی مدت میں مکمل کیا جائے گا۔جنرل منیجر داسو ہائیڈرو پاور پراجیکٹ(واپڈا)حاجی محمد فاروق احمد اورڈپٹی ڈائریکٹر چائنا ریلوے فرسٹ گروپ ژانگ یونگ نے معاہدے پر دستخط کئے ۔ معاہدے پر دستخط کرنے کی تقریب گزشتہ روز واپڈا ہاؤس میں منعقد ہوئی ۔ چیئرمین واپڈا ظفر محمود، ممبر(واٹر) محمد شعیب اقبال، ممبر(پاور) بدرالمنیر مرتضیٰ، ممبر (فنانس) انوارالحق ، منیجنگ ڈائریکٹر(ایڈمنسٹریشن) محمد اشرف خان ، سیکرٹری واپڈا عامر احمد اور واپڈا کے سینئر آفیسرز اور کنسلٹنٹ کے نمائندے تقریب میں شریک ہوئے۔

اس موقع پر گفتگوکرتے ہوئے چیئرمین واپڈا نے کہا کہ داسو ہائیڈرو پاور پراجیکٹ ملک میں بجلی کی قلت پر قابو پانے کیلئے نہایت اہمیت کا حامل منصوبہ ہے۔ انہوں نے کنٹریکٹر پر زور دیا کہ پراجیکٹ پرتعمیراتی کام لاگت اور مقررہ وقت کے اندر کوالٹی کے معیار کو برقرار رکھتے ہوئے مکمل کیا جائے۔چائنا ریلوے فرسٹ گروپ کے نمائندے نے واپڈا حکام کو یقین دلایا کہ پراجیکٹ کی تعمیر مقررہ وقت اور کوالٹی کے معیار کو برقرار رکھتے ہوئے کی جائے گی۔قبل ازیں داسو ہائیڈرو پاور پراجیکٹ پر پیشرفت کے حوالے سے بریفنگ دیتے ہوئے جنرل منیجر داسو ہائیڈرو پاور پراجیکٹ نے بتایا کہ دبیر خواڑ ہائیڈل پاور سٹیشن سے داسو پراجیکٹ سائٹ تک 132 کے وی ٹرانسمیشن لائن ، رائٹ بنک روڈ،پراجیکٹ کالونی اور قراقرم ہائی وے کی ازسرِ نوتعمیر کیلئے 4کنٹریکٹس پہلے ہی ایوارڈ کئے جاچکے ہیں اور متعلقہ تعمیراتی کمپنیاں مشینری کے ساتھ اپنی اپنی سائٹ پر پہنچ چکی ہیں۔چیئرمین واپڈا نے پراجیکٹ حکام کو ہدایت کی کہ کنٹریکٹ کو بروقت مکمل کرنے کیلئے ٹرانسمیشن لائن پر تعمیراتی کام کو جلد از جلد تیزکیا جائے۔یہ امر قابلِ ذکر ہے کہ وفاقی حکومت داسو ہائیڈرو پاور پراجیکٹ کو دو سٹیج میں تعمیر کر رہی ہے۔ سٹیج ۔ ون کی تعمیر کے لئے ورلڈ بنک 588.4 ملین ڈالر فراہم کر رہا ہے ۔اِس کے ساتھ ساتھ ورلڈ بنک 460ملین ڈالر کی بنک گارنٹی بھی دے گا ۔ 2160 میگاواٹ پیداواری صلاحیت کے سٹیج ۔ ون کی تکمیل پر ہر سال 12ارب یونٹ سستی پن بجلی حاصل ہوگی ۔اس سے قومی نظام میں پن بجلی کا تناسب بہتر ہوگااور بجلی کے نرخ کم ہونے پر عوام کو ریلیف مل سکے گا۔پراجیکٹ کی تعمیر سے خیبر پختونخوا کے دور دراز علاقوں میں اقتصادی اور معاشرتی ترقی کا ایک نیا دور شروع ہوگا ۔

مزید : کامرس


loading...