مصطفی کانجو کی بریت کیخلاف حکومت پنجاب کی دائر اپیل پر فیصلہ محفوظ

مصطفی کانجو کی بریت کیخلاف حکومت پنجاب کی دائر اپیل پر فیصلہ محفوظ

لاہور(نامہ نگار خصوصی )لاہور ہائیکورٹ نے یتیم طالبعلم زین قتل کیس کے ملزم مصطفی کانجو اور دیگر ملزمان کی بریت کے خلاف حکومت پنجاب کی جانب سے دائر اپیل پر فیصلہ محفوظ کر لیا۔جسٹس شاہدحمید ڈار اور جسٹس شہباز رضوی کی سربراہی میں ڈویڑن بنچ نے کیس کی سماعت کی۔پراسیکیوٹر جنرل پنجاب سید احتشام قادر نے عدالت کو بتایا کہ ٹرائل عدالت نے مدعی مقدمہ اور گواہوں کے منحرف ہونے کے بعد پراسیکیوشن کے گواہوں پر جرح کئے بغیر زین قتل کیس کافیصلہ سنایا۔انہوں نے کہا کہ ملزم کے قبضے سے کلاشنکوف بھی برآمد کر لی گئی مگر ٹرائل عدالت نے کلاشنکوف برآمد کرنے والے گواہ پر بھی جرح نہیں کی۔انہوں نے کہا کہ فرانزک رپورٹ کے مطابق برآمد ہونے والی کلاشنکوف کی گولی سے ہی زین کا قتل کیا گیا۔انہوں نے عدالت سے استدعا کی کہ ٹرائل عدالت کے فیصلے کو کالعدم قرار دیتے ہوئے حکومت پنجاب کی اپیل منظور کی جائے جس پر عدالت نے فریقین کے وکلاء کے دلائل سننے کے بعد فیصلہ محفوظ کر لیا۔

مزید : علاقائی


loading...