تحریک رہائی غازی ممتاز حسین قادری کی اپیل پر ملک بھر میںیوم احتجاج منایا گیا

تحریک رہائی غازی ممتاز حسین قادری کی اپیل پر ملک بھر میںیوم احتجاج منایا گیا

لاہور( نمائندہ خصوصی)تحریک رہائی غازی ممتاز حسین قادری کے امیر ڈاکٹر محمد اشرف آصف جلالی کی اپیل پر لاہور ، کراچی ، اسلام آباد ، راولپنڈی ، کوئٹہ،پشاور، ملتان ، گوجرانوالہ ، گجرات ، سیالکوٹ، فیصل آباد ، شیخوپورہ سمیت ملک بھر میں سپریم کورٹ میں نظر ثانی کی درخواست مسترد ہونے پر یوم احتجاج منایا گیا۔ جبکہ لاہور میں سب سے بڑی ریلی داتا دربار سے شروع ہوکرپنجاب اسمبلی تک نکالی گئی۔ریلی کے شرکاء سے خطاب کرتے ہوئے ڈاکٹر محمد اشرف آصف جلالی، مولانا خادم حسین رضوی، پیر محمد افضل قادری، قاری محمد زوار بہادر و دیگر قائدین نے کہا کہ غازی ممتاز حسین قادری کی سزا اسلامی تعلیمات کے منافی ہے۔ممتاز قادری نے توہین رسالت پر جس ردّ عمل کا مظاہرہ کیاو ہ ایمانی غیرت کا تقاضا ہے۔

نبی اکرم ﷺ نے متعدد مقامات پر گستاخوں کو قتل کرنے کا خود حکم فرمایا۔خلفائے راشدین ، صحابہ کرام ، آئمہ مجتہدین رضی اللہ عنہم اور بعد والی اُمت کے تمام علماء اس بات پر متفق ہیں کہ گستاخ رسول واجب القتل ہیں ۔ علمائے کرام مفتیان عظام بار بار پہلے بھی اور اَب بھی کہہ رہے ہیں کہ گورنر سلمان تاثیر نے قرآن و سنت کے قانون کو کالا اور ظالم قانون کہا اور توہین رسالت پر سزائے موت کو ظالم سزا کہا چنانچہ وہ توہین رسالت کا مرتکب ہوا ۔ علماء نے ملک بھر میں احتجاج کیامگرسلمان تاثیر اپنی بات پر ڈٹا رہا اور انہیں جوتے کی نوک پر رکھنے کا کہا جبکہ حکومت خاموش تماشائی بنی رہی۔بلکہ علمائے اہلسنت نے ملک بھر میں سلمان تاثیر کے خلافFIR کیلئے درخواستیں بھی دیں۔لہٰذاگستاخ رسول کا قتل رائیگاں ہے،شریعت اس پر کوئی حَد، قصاص یا دیت طلب نہیں کرتی۔ عظیم الشان احتجاج میں یہ مطالبہ کیا جاتا ہے کہ ممتاز قادری کو قرآن و سنت کی روشنی میں فی الفور رہا کیا جائے اور اس سلسلہ میں کوئی بیرونی دباؤکو ہر گز قبول نہ کیا جائے۔ سید ظہیر الحسن شاہ، سید مختار اشرف رضوی، سید خُرم ریاض شاہ،مولانا ارشد نعیمی، مولانا فرمان علی جلالی، مولانا عبدالکریم جلالی، مولانا محمد فیاض قادری، صاحبزادہ مرتضیٰ علی ہاشمی سمیت کثیر تعداد میں علماء و مشائخ اہلسنت نے شرکت کی ۔

مزید : میٹروپولیٹن 4


loading...