چاسدہ؛ حساس اداروں کی کارروائی ، 3غیر ملکیوں سمیت 18شدت پسند گرفتار

چاسدہ؛ حساس اداروں کی کارروائی ، 3غیر ملکیوں سمیت 18شدت پسند گرفتار

  چارسدہ (بیورو رپورٹ) حساس اداروں کی کاروائی ۔ تین غیر ملکیوں سمیت 18شدت پسند گرفتار ۔ دو کا تعلق الجزائر او ر ایک کا تعلق اردن سے ہے ۔ دیگر گرفتار افراد میں بیشتر کا تعلق وزیر ستان سے ہے ۔ تمام گرفتار افراد نامعلوم مقام پر منتقل ۔ تفصیلات کے مطابق چارسدہ میں حسا س اداروں نے ایک کاروائی کے دوران تین غیر ملکیوں کو گرفتار کرکے تفتیش کیلئے نامعلوم مقام پر منتقل کیا ہے ۔ گرفتار ہونے والے غیر ملکیوں میں علی ولد خلیفہ اور اسماعیل ولد صائح کا تعلق الجزائر سے ہے جبکہ موسی خلیل ولد یوسف کا تعلق اردن سے ہے ۔ غیر ملکی باشندوں کے ہمراہ دیگر 15افراد کو بھی گرفتار کیا گیا ہے جن میں اکثریت کا تعلق شمالی وزیر ستان سے بتایا جا رہا ہے ۔ چارسدہ میں سیکیورٹی حدشات کے پیش نظر گزشتہ کئی دنوں سے حساس اداروں اور فورسسز نے بڑے پیمانے پر کاروائیوں کا آغاز کیا ہے اور اس دوران خود کش بمبار سمیت شدت پسند تنظیم کے ایک بڑے نیٹ ورک کو بے نقاب کیا گیا ہے اور اس حوالے سے مزید کاروائیاں جاری ہے ۔

کوھاٹ (بیورو رپورٹ) کوہاٹ بلی ٹنگ کے مختلف علاقوں میں سرچ آپریشن کے دوران کالعدم تنظیم کے مطلوب دہشتگرد سمیت 44مشتبہ افراد کو گرفتار کر لیا گیا ہے۔آپریشن میں دھمکی آمیز کالز کے مقدمہ میں نامزد اشتہاری مجرم کو بھی حراست میں لیا گیا ہے۔ٹارگٹڈکاروائی میں گرفتار افراد سے ناجائز اسلحہ اور منشیات بھی قبضے میں لئے گئے ہیں۔چھاپہ مار کاروائیوں میں دو ڈی ایس پیز اور پانچ ایس ایچ اوز کے علاوہ بھاری پولیس نفری نے حصہ لیا۔حساس اداروں کی ممکنہ تخریبی کاروائیوں کی رپورٹ کے پیش نظر ضلع بھر میں حفاظتی انتظامات مزید سخت کردئیے گئے ہیں۔ پولیس ذرائع کے مطابق کوہاٹ میں مشتبہ دہشتگردوں ،سنگین وارداتوں میں ملوث اشتہاریوں اور جرائم پیشہ عناصر کے خلاف پولیس کا ضلع بھر میں سرچ آپریشن جاری ہے جسکے تسلسل میں سوموار کی صبح تھانہ بلی ٹنگ سے ملحقہ علاقوں خرماتو،اورکزئی بانڈہ اور ڈھیری بانڈہ میں پولیس کی بھاری نفری نے اچانک کاروائی کرتے ہوئے اورکزئی بانڈہ میں ایک گھر پر چھاپہ مارا جہاں اورکزئی ایجنسی سے تعلق رکھنے والے قبائلی شدت پسند محمدہارون کو حراست میں لے لیا گیا۔کاروائی میں ایک اور مجرم اشتہاری فضل الرحمان ساکن چلو زیارت کو بھی گرفتار کرلیا گیاجبکہ سرچ آپریشن کے دوران جرائم پیشہ افراد کے ٹھکانوں پر چھاپہ مار کاروائیوں میں مزکورہ علاقوں سے ناجائز اسلحہ و منشیات رکھنے کے الزام میں مزید آٹھ ملزمان سمیت44مشتبہ افراد کوحراست میں لیکر انکے قبضے سے مجموعی طور پر دو بندوق،ایک رائفل،چار پستول، درجنوں کارتوس اور دو کلو گرام چرس برآمد کرکے گرفتار افراد کو مزید پوچھ گچھ کیلئے فوری طور پرتھانہ بلی ٹنگ منتقل کر دیا گیا ہے۔آپریشن میں پولیس نے سیکیورٹی خدشات کے پیش نظر علاقے میں موجود حساس مقامات،تعلیمی اداروں اور کرایہ کے گھروں کو چیک کرکے اضافی حفاظتی اقدامات کے مجوزہ پلان پر عملدرآمدیقینی بنانے کیلئے متعلقہ افراد کو تنبیہ کے نوٹس بھی جاری کئے۔ آپریشن کی کاروائی چار گھنٹے تک جاری رہی اور اس دوران علاقے میں سیکیورٹی ہائی الرٹ کرکے جگہ جگہ ناکہ بندی کرلی گئی تھی جبکہ علاقے میں آنے جانے والی گاڑیوں اور افراد کی تلاشی کی غرض سے مختلف مقامات پرسنیپ چیکنگ کا سلسلہ جاری رہا۔واضح رہے کہ گرفتار شدت پسند ہارون بم و بارود رکھنے ،سیکیورٹی فورسز پر حملوں اور قتل و اقدام قتل کی وارداتوں میں کوہاٹ سمیت صوبائی پولیس اور سیکیورٹی اداروں کو مطلوب تھا۔

مزید : پشاورصفحہ اول


loading...