پی ٹی آئی نے بلدیاتی انتخابات میں ریکارڈ دھاندلی کی ،گوہر الرحمن

پی ٹی آئی نے بلدیاتی انتخابات میں ریکارڈ دھاندلی کی ،گوہر الرحمن

صوابی( بیورورپورٹ) اے این پی زیدہ ضلع صوابی کے صدر ڈاکٹر گوہر الرحمن نے کہا ہے کہ صوبہ خیبر پختونخوا میں بلدیاتی الیکشن کے سات ماہ گزجانے کے باوجود ترقیاتی کام شروع ہوئے نہ ہی عوام کے منتخب نمائندوں کو اختیارات اور فنڈز دیئے گئے۔ پی ٹی آئی نے بلدیاتی الیکشن میں ریکارڈ دھاندلی کی تھی اگر فوج کے نگرانی میں الیکشن ہوتا تو پی ٹی آئی ایک ضلعی سیٹ بھی نہیں جیت سکتی۔ آرمی پبلک سکول کے سانحہ پر ساری قوم نڈھال ہے ہماری دعا ان شہداء کے لئے جو قوم کی خاطر جانوں کے نذرانے میں پیش پیش ہیں ایک بیان میں انہوں ںے کہا کہ سپیکر اسمبلی اسدقیصر نے اپنے حلقے میں کھنڈہ سے ٹوپی تک سڑک کی تعمیراتی کام کا افتتاح کئی مہینے قبل کیا تھا متعلقہ محکموں نے سڑک کو کھود کر کھنڈرات میں تبدیل کر کے رہی سہی کسر بھی پور ی کر دی۔ جس کی وجہ سے آئے روز حادثات ہو رہے ہیں جس میں قیمتی جانوں کے ضیاع کا خدشہ ہے اور ٹوپی سے کھنڈہ تک مذکورہ سڑک موت کے کنویں کا منظر پیش کر رہی ہے اور پانچ سال تک بھی اس کی تعمیر ممکن نہیں انہوں نے کہا کہ آئندہ الیکشن میں ضلع صوابی کے عوام پی ٹی آئی کا بوریا بستر گول کر کے الیکشن سے بھاگنے نہیں دینگے انہوں نے کہا کہ پختونوں کے جسم میں پالنے والا خون فخر افغان باچا خان بابا کی امانت ہے اے این پی عوام کی خدمت پر یقین رکھتی ہے اس مقصد کے حصول کے لئے چھ سو سے زائد قائدین اور کارکنوں نے جام شہادت نوش کیا ہے دنیا کو معلوم ہے کہ پختون ایک غیر ت مند قوم ہے۔ ساٹھ سالوں میں کسی حکمران نے پختونوں کو شناخت نہیں دی مگر اے این پی نے اقتدار میں آکر اسفند یار ولی خان اور امیر حیدر خان ہو تی نے وفاق سے صوبے کا نام خیبر پختونخوامنوا لیا اکثریتی اضلاع میں یونیورسٹیاں ، کالجز اور سکولز کے جال بچھا کر تعلیم کے میدان میں صوبے کا آگے لایا#

مزید : پشاورصفحہ آخر


loading...