لنڈی کوتل ،ایجنسی ہیڈکوارٹر ہسپتال میں مریض کے رشتہ داروں اور ڈاکٹر کے درمیان تلخ کلامی

لنڈی کوتل ،ایجنسی ہیڈکوارٹر ہسپتال میں مریض کے رشتہ داروں اور ڈاکٹر کے ...

خیبر ایجنسی ( بیورورپورٹ)لنڈی کوتل،ایجنسی ہیڈکوارٹر ہسپتا ل میں گزشتہ رات مریض کے رشتہ داروں اور ڈاکٹر کے درمیان تلخ کلامی، ڈاکٹروں نے احتجاجاًً ہسپتال کو ایک گھنٹے کے لئے بند کردیا، انتظامیہ کی مداخلت اور یقین دہانی کے بعد ڈاکٹروں نے ہڑتال ختم کر دی ، خاصہ دار اہلکاروں کی غفلت پر بھی ایکشن لیا گیا۔ لنڈیکوتل ہسپتال میں گزشتہ آدھی رات ایک مریض بچے کو بیماری کی حالت میں ایجنسی ہیڈکوارٹر ہسپتال لایا گیا مریض کے رشتہ داروں نے مریض کو پرائیویٹ علاج کروانے کے لئے ڈاکٹر کے ہاسٹل لایاگیا اور وہاں موجود ڈاکٹر حمید کے ساتھ غیر ضروری طور پر بد تمیزی کی اور گالیا دی جس پر ہسپتال کے ڈاکٹروں نے احتجاج کرتے ہوئے ہسپتال کے او پی ڈی میں مریضوں کے معائنے سے ایک گھنٹہ تک انکار کر دیا بعد میں اے پی اے لنڈیکوتل محمد ناصر خان نے لائن آفیسر امجد شینواری کو ڈاکٹر وں کے ساتھ مذاکرات کے لئے بھیج دیا اور انہوں نے ڈاکٹروں کو ہر ممکن تعاون کی یقین دہانی کرائی جس سے مطمئن ہو کر ڈاکٹروں نے ہڑتال ختم کردی اور اوپی ڈی میں مریضوں کا معائنہ شروع کر دیا ذرائع کے مطابق ڈاکٹروں کی شکایت پر انتظامیہ نے ہسپتال میں موجود خاصہ دار فورس کے متعلقہ اہلکاروں کو لائن حاضر کر کے غفلت کی وجوہات معلوم کرنے لئے کارروائی شروع کر دی

مزید : پشاورصفحہ آخر


loading...