شانگلہ کی پسماندگی دو رکرنا اولین ترجیح ہے ،عبدالمنعیم

شانگلہ کی پسماندگی دو رکرنا اولین ترجیح ہے ،عبدالمنعیم

الپوری(ڈسٹرکٹ رپورٹر) شانگلہ سے رکن صوبائی اسمبلی اور وزیر اعلیٰ خیبر پختونخوا کے معاون خصوصی عبدالمنعیم نے کہا ہے کہ شانگلہ کی پسماندگی کو دور کرنے کے لئے گزشتہ دو سال میں ریکارڈ ترقیاتی کام کےئے ہے جو گزشتہ تیس سالوں سے شانگلہ کے سیاست پر قابضین نے نہیں کےئے ہیں ہم شانگلہ سے پاکستان مسلم لیگ (ن) کے منتخب ایم این اے اور وزیر اعظم کے مشیر امیر مقام اور ضلع ناظم شانگلہ کو ترقیاتی کاموں پر چیلنج دیتا ہو جو کام انہوں گزشتہ تیس ماہ میں کےئے وہ پاکستان مسلم لیگ نے گزشتہ تیس سال میں نہ کرسکے شانگلہ کے عوام نے گزشتہ روز پاکستان تحریک انصاف شانگلہ میں منعقد جلسہ نے ثابت کردیا ہے کہ آب شانگلہ میں مفاد پرست سیاست دانوں کے لئے کوئی جگہ نہیں ۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے گزشتہ روز پاکستان مسلم لیگ کے ایم این ڈاکٹر عباد کے بیان پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان مسلم لیگ (ن) کے ایم این اے جو گزشتہ تیس سال سے شانگلہ کے سیاست پر قابض ہے اور انکی ہی پارٹی سے گزشتہ دس سال ضلع نظامت ہونے کی باوجود وہ شانگلہ میں وزیراعظم کو دعوت دیکر انکے جلسے جتنا جلسہ منعقد کریں شانگلہ کے عوام نے آب انکی سیاست کو مسترد کردیا ہے ۔انہوں نے کہا کہ امیر مقام اور انکی پارٹی نے شانگلہ کے عوام کو پسماندگی کے طرف دھکیل دیا ہے مگر پاکستان تحریک انصاف شانگلہ کے عوام کو تمام بنیادی سہولیات انکی دہلیز پر دینگے ۔انہوں نے کہا کہ ہم 2005 کے زلزلے کے طرح حکومت کی جانب سے آئی ہوئی امداد کو ذاتی گوداموں میں نہیں سنبھالینگے بلکہ حکومت کے جانب سے زلزلہ متاثرین کے لئے آئے ہوئے ایک ایک پیسہ ان پر خرچ کرینگے ۔

مزید : پشاورصفحہ آخر


loading...