مہمند ایجنسی ،اساتذہ کا احتجاج نویں روز میں داخل ،پڑھائی متاثر

مہمند ایجنسی ،اساتذہ کا احتجاج نویں روز میں داخل ،پڑھائی متاثر

مہمند ایجنسی ( نمائندہ پاکستان )مہمند ایجنسی میں 9 روز سے سرکاری سکول بند، طلباء کی پڑھائی بری طرح متاثر، اساتذہ کا احتجاج غلنئی سے پشاور منتقل کرنے کا فیصلہ۔ جمعرات کے روز مہمند ایجنسی کے مرد و خواتین تمام اساتذہ پشاور پریس کلب کے سامنے احتجاج کر کے دھرنا دینگے۔ ٹیچرز رہنماؤں کا اعلان۔ عوامی حلقوں کا اساتذہ سے بچوں کے مستقبل کے خاطر سکول کھولنے اور سیاہ پٹیوں تک احتجاج محدود رکھنے کا مطالبہ۔ تفصیلات کے مطابق مہمند ایجنسی میں اساتذہ کی اپ گریڈیشن کیلئے احتجاج کے نویں روز مظاہرین نے غلنئی سے اپنا احتجاج اور دھرنا پشاور منتقل کرنے کا اعلان کیا۔ ٹیچرز رہنماؤں نے جمعرات کے روز پشاور پریس کلب کے سامنے مہمند ایجنسی کے میل اورع فیمیل اساتذہ کی احتجاجی مظاہرے اور دھرنا دینے کی کال دی ہے۔ دوسری طرف پڑھائی کے اس اہم مرحلے میں 9 روز تک سکولوں کی بندش سے طلباء کا دھیان پڑھائی سے ہٹ گیا ہے جو سالانہ امتحانات پر منفی اثرات چھوڑے گی۔ طلباء کے والدین نے مہمند ایجنسی کے اساتذہ سے انسانی ہمدردی اور بچوں کا تعلیمی مستقبل بچانے کے خاطر سکولز کھولنے اور اپنا احتجاج سکول کے اندر سیاہ پٹیاں باندھ کر محدود کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔ اور حکومت سے بھی اپیل کی ہے کہ اساتذہ کے ساتھ معاملہ افہام و تفہیم سے حل کیا جائے اور جنگ زدہ فاٹا میں تعلیمی تعطل کا خاتمہ کریں۔

مزید : پشاورصفحہ آخر


loading...