بٹ خیلہ ،بلدیاتی ملازمین کا تنخواہیں بند ہونے سے ہڑتال ودھرنا

بٹ خیلہ ،بلدیاتی ملازمین کا تنخواہیں بند ہونے سے ہڑتال ودھرنا

بٹ خیلہ (بیورو رپورٹ )ٹی ایم اے بٹ خیلہ کے ملازمین نے متفقہ فیصلہ کیا ہے کہ اگر21دسمبر2015ء تک سٹاف کی چار ماہ سے بند تنخواہوں کی ادائیگی نہ کی گئی تو احتجاجاواٹر سپلائی سمیت تمام میونسپل سروسز بند کرکے ہڑتال و دھرنا دیا جائے گا۔یو نائیٹڈایمپلائیز یو نین ٹی ایم اے بٹ خیلہ کے ہنگامی اجلاس سے خطاب کرتے ہو ئے صدر انور خان جنرل سیکرٹری قاری محمد زرین سینئر نائب صدر باچہ زادہ اور فنا نس سیکر ٹری علی رحمن نے کہا کہ وزیر اعلیٰ کے مشیر شکیل خان اور ڈی سی علی عباس کی تنخواہوں کی جلد ادائیگی کی یقین دہا نی پر ہم ہڑتال ختم کی تھی جبکہ وزیر بلدیات عنایت اللہ نے ایک ماہ قبل 2کروڑ80لاکھ کی گرانٹ کا اعلان کیا تھامگر افسوس یہ تمام وعدے اور اعلانات دھرے کے دھرے رہ گئے اور تاحال غریب و بے سہارا ملازمین چار ماہ سے تنخواہوں سے محروم ہیں انھوں نے کہا کہ ہمارے چولہے ٹھنڈے جبکہ ہم دکانداروں کے مقروض ہو چکے ہیں اسی تشویشناک صورت حال کی وجہ سے گذشتے ہفتے ٹی ایم اے کا غریب سینٹری ورکر روزی خان دل برداشتہ ہوکرانتقال کر چکاہے اجلاس میں وزیر اعلی پرویز خٹک وزیر بلدیات عنایت اللہ مشیر وزیر اعلیٰ شکیل خان ضلع ناظم سید احمد علی شاہ چیئرمین ڈیڈک سید محمد علی شاہ اور ڈی سی علی عباس سے مطالبہ کیا گیا کہ بلدیہ بٹ خیلہ کے عملے کی بند تنخواہوں کی ادا ئیگی کا بند و بست کیا جائے ۔اس موقع پر روزی خان اور ٹانک کے بلدیاتی ملازم ہاشم خان کی مغفرت کیلئے دعا کی گئی۔

مزید : پشاورصفحہ آخر


loading...