بیٹے کی شہادت پر فخر ہے ،کرنل سریر خان

بیٹے کی شہادت پر فخر ہے ،کرنل سریر خان

چارسدہ (بیورو رپورٹ) سانحہ اے پی ایس کے شہید طالب علم رضوان سریر کے والد کرنل سریر خان نے کہا ہے کہ دہشت گردوں نے ایسی قوم کو للکارا ہے جس کا ہر بیٹا دھرتی ماں پر قربان ہونے کیلئے تیاربیٹھا ہے۔اپنے بیٹے کی شہادت پر بہت فخر ہے ۔ کئی جنگوں میں خود حصہ لیا مگر شہادت نصیب نہ ہوئی ۔دہشت گردوں نے اے پی ایس پر حملہ کرکے تعلیم کی روشنی بجھانے کی ناکام کو شش کی مگر پوری قوم نے نہ صرف دہشت گردوں کے خلاف ایکا کیا بلکہ تعلیم کی روشنی کو مزید پھیلایا ۔ وہ گورنمنٹ رضوان سریر شہید ہائیر سیکنڈری سکول اتمانزئی میں سانحہ اے پی ایس کے شہداء کی پہلی برسی کے حوالے سے منعقدہ ایک پر وقار تقریب سے خطاب کر رہے تھے ۔ اس موقع پر ڈی ای او شریف گل خان ، سکول پرنسپل حکیم اللہ خان ،اول خان،مسرت شاہ ، پی ٹی آئی جعفر شاہ ،پی ٹی سی کے ممبران ، سکول کے اساتذہ کرام اور عمائدین علاقہ بھی موجود تھے ۔ تقریب میں سکول کے بچوں نے خوبصورت انداز میں مارچ پاسٹ کیا ،ملی نغموں اورتقریروں میں شہداء کو خراج تحسین پیش کیا ۔ تقریب سے خطاب کر تے ہوئے شہید رضوان سریر کے والد کرنل سریر خان ، ڈی ای او شریف گل ، پرنسپل حکیم اللہ خان ، مولانا ہدایت الحق اور دیگر نے کہا کہ سانحہ اے پی ایس ایک ایسا دلخراش واقعہ تھا جس نے پوری دنیا کو جنجوڑ کر دہشت گردوں کے خلاف ایک پیج پر متحد کر دیا ۔ مقررین نے کہاکہ دہشت گرد وں نے تعلیم کی روشنی بجھانے کی کو شش کی مگر غیرت مند قوم کے غیرت مند بچوں نے دہشت گردوں کو منہ توڑ جواب دینے کیلئے تعلیم کی روشنی مزید پھیلانے کا عز م کر رکھا ہے ۔ اس موقع پر ڈی ای او شریف گل نے انکشاف کیا کہ سانحہ اے پی ایس میں ان کا بیٹا حسنین بھی شہید ہو ا ہے اور ان کی شہادت پر پورے خاندان کو فخر ہے جبکہ کرنل سریر خان نے اپنی تقریر میں کہا کہ دھرتی ماں کیلئے انہوں نے کئی معرکوں میں حصہ لیا مگر شہادت نصیب نہ ہوئی ۔ انہوں نے کہاکہ سانحہ اے پی ایس کو بھلانا بہت مشکل ہے مگر اس بات پر بہت خوشی اور اطمینان ہے کہ سانحہ کے بعد پوری قوم دہشت گردوں کے خلاف سیسہ پلائی ہوئی دیوار کی طرح کھڑی ہو گئی او ر آج قوم کا ہر بیٹا وطن پر مر مٹنے کیلئے تیار بیٹھا ہے ۔

مزید : پشاورصفحہ آخر


loading...