قومی اسمبلی اجلا س میں ایاز صادق اور جمشید دستی میں جھڑپ

 قومی اسمبلی اجلا س میں ایاز صادق اور جمشید دستی میں جھڑپ

اسلام آباد(آن لائن) قومی اسمبلی میں نکتہ اعتراض پر با ت کی اجازت نہ ملنے پر سپیکر ایاز صادق اور جمشید دستی میں شدید تلخ کلامی ہوئی ۔ سپیکر نے کہا کہ پہلے بھی دو تحریک استحقاق آپ کیخلاف آچکی ہیں اب قواعد کی خلاف ورزی کی تو ایوان سے اٹھا کر باہر پھینک دونگا ۔ سپیکر کے ریمارکس پر جمشید دستی ایوان سے واک آؤٹ کر گئے۔ منگل کے روز پرائیویٹ ممبر ڈے کے موقع پر آزاد رکن اسمبلی جمشید دستی نے نکتہ ا عتراض پر بیان کرنے پر اصرار کیا تو سپیکر نے اجازت نہیں دی اور کہا کہ آپ خاموش ہوجائیں آپ کو غیر متعلقہ ایشوز پر بات نہیں کرنے دی جائے گی جس پر جمشید دستی نے کہا کہ بطور رکن قومی اسمبلی میرا حق ہے کہ ایوان میں اپنا موقف پیش کروں جس پر سپیکر برہم ہوگئے اور کہا کہ آپ اپنی روش کو تبدیل کریں کیونکہ ایوان کی کارروائی قواعد کے مطابق ہوگی آپ کیخلاف پہلے ہی بہت شکایات ہیں اور دو تحریک استحقاق بھی آپ کیخلاف آچکی ہیں اگر باز نہ آئے تو قواعد کے مطابق آپ کیخلاف کارروائی ہوگی پھر سے جمشید دستی کچھ بولے تو سپیکر نے کہا کہ خاموش ہو جاؤ ورنہ ایوان سے اٹھا کر باہر پھینک دونگا ،سپیکر قومی اسمبلی کے ریمارکس پر جمشید دستی احتجاجاً ایوان کی کارروائی سے واک آؤٹ کرگئے

قومی اسمبلی

مزید : راولپنڈی صفحہ اول


loading...