صرف پاکستان کے زیر انتظام کشمیر پر بات کی جائے گی،بھارتی ہائی کمشنر

صرف پاکستان کے زیر انتظام کشمیر پر بات کی جائے گی،بھارتی ہائی کمشنر

اسلام آباد(آن لائن)پاکستان میں متعین بھارتی ہائی کمشنر ٹی سی راگھون نے کہاہے کہ ان کا ملک آئندہ امن مذاکرات میں کشمیر کے صرف اس حصے پر بات کرے گا جو اسلام آباد کے زیر انتظام ہے،ان خیالات کا اظہار انہوں نے میڈیا سے مختصر بات چیت کرتے ہوئے کیا ،صحافی کے سوال پر بھارتی ہائی کمشنر نے کہا کہ نئی دہلی کے زیر انتظام ہر گفتگو کی گنجائش ہے ،ان کا کہنا تھا کہ 1947 میں پاکستانی فورسز کے کشمیر پر حملے کے بعد بھارت نے سب سے پہلے اقوام متحدہ سے مداخلت کی پٹیشن دائر کی تھی،ہماری پٹیشن کی بنیاد یہ تھی کہ بھارت کے حصے میں آنے والے کشمیر کا ایک حصہ پر پاکستانی فوج کاغیر قانونی قبضہ ہے،انہوں نے کہا کہ بھارتی وزیر خارجہ سشما سوراج کا دورہ پاکستان مفیدرہا ہے دونوں ممالک نے مذاکرات کی میز پر مسائل حل کرنے پر اتفاق کیا ہے اور دونوں ممالک کا یہ قدم خوش آئند ہے، تاہم انکا کہنا تھا کہ مذاکرات میں بھارت صرف اس حصے پر بات کرے گا جو اسلام آباد کے زیر کنٹرول ہے،حال ہی میں ہندوستان کی وزیر خارجہ سشما سوراج کے پاکستان دورے کے دوران دونوں ملکوں نے وزارتی سطح پر بات چیت دوبارہ شروع کرنے کا اعلان کیا تھا،دونوں ملکوں کے جاری مشترکہ اعلامیہ میں کہا گیا تھا کہ مذاکرات میں امن،سکیورٹی، کشمیر سمیت دیگر علاقائی تنازعات پر گفتگو ہو گی،تاہم بھارتی ہائی کمشنر راگھون کے اس بیان کے بعد امن بات چیت کے عمل میں رکاوٹ کھڑی ہونے کا اندیشہ لاحق ہو گیاہے۔

بھارتی ہائی کمشنر

مزید : راولپنڈی صفحہ اول


loading...