زندگی کا سب سے بڑا دکھ یہ ہے کہ جب دولت شہرت میرے پاس آ گئی توماں پاس نہیں تھی: جاوید شیخ

زندگی کا سب سے بڑا دکھ یہ ہے کہ جب دولت شہرت میرے پاس آ گئی توماں پاس نہیں تھی: ...
زندگی کا سب سے بڑا دکھ یہ ہے کہ جب دولت شہرت میرے پاس آ گئی توماں پاس نہیں تھی: جاوید شیخ

  


استنبول(مانیٹرنگ ڈیسک )لالی و بالی ووڈ اداکار جاوید شیخ نے کہا ہے کہ زندگی کا سب سے بڑا دکھ یہ ہے کہ جب دولت شہرت میرے پاس آ گئی اورمیں ایک کامیاب اداکار بن گیا تو اسوقت میری ماں میرے پاس نہیں تھی۔ انہوں نے یہ باتیں اردو 1ٹی کے پروگرام استنبول ٹو ڈے میں اظہارِ خیال کرتے ہوئے کیں۔جب پروگرام کی میزبان ماریہ واسطی کی جانب سے ان سے پوچھا گیا کہ آپ کیا سمجھتے ہیں کہ آپ کی زندگی کا سب سے بڑا دکھ کیا ہے تو جاوید شیخ نے کہا کہ میں نے سخت محنت کی ،دولت بھی حاصل کر لی اور شہرت بھی اور ایک کامیاب اداکار بھی بن گیا تاہم اس وقت میری ماں میرے پاس نہیں تھی ۔ اداکار کے اس جواب پر پروگرام میں ذرا سے اداسی سی چھا گئی تاہم ماریہ واسطی نے کشتی کے متعلق سوال کر کے ماحول کو خوشگوار بنا دیا ۔ ماریہ واسطی نے کہا کہ آپ کو کشتی پسند ہے تو اداکار نے مسکراتے ہوئے کہا جی ہاں!۔ میزبان واسطی نے پھر کہا تو ہو جائیں دو دو ہاتھ جس پر جاوید شیخ بھی اپنی سیٹ سے اُٹھ گئے اور دونوں مسکراتے رہ گئے۔

مزید : تفریح


loading...