بالآخر امریکا نے روس کے سامنے گھٹنے ٹیک دئیے، سب سے بڑا مطالبہ مان لیا، مشرق وسطیٰ میں اب تک کی سب سے بڑی پیشرفت

بالآخر امریکا نے روس کے سامنے گھٹنے ٹیک دئیے، سب سے بڑا مطالبہ مان لیا، مشرق ...
بالآخر امریکا نے روس کے سامنے گھٹنے ٹیک دئیے، سب سے بڑا مطالبہ مان لیا، مشرق وسطیٰ میں اب تک کی سب سے بڑی پیشرفت

  


ماسکو (نیوز ڈیسک) روس اور امریکا کے درمیان شام کے مسئلے پر پایا جانے والا کئی سال پرانا تنازعہ بالآخر حل ہوگیا ہے اور امریکا نے روسی موقف تسلیم کرلیا ہے کہ شام کے صدر بشارالاسد کا تختہ الٹنے کا کسی کو حق نہیں اور شام کے لوگ خود فیصلہ کریں گے کہ انہیں بشارالاسد کی ضرورت ہے یا نہیں۔

خبر رساں ایجنسی ایسوسی ایٹڈپریس کے مطابق یہ اہم پیشرفت روسی دارالحکومت میں امریکی وزیر خارجہ جان کیری اور روسی صدر ولادی میر پیوٹن کے درمیان ملاقات میں ہوئی۔امریکی وزیر خارجہ نے ملاقات کے بعد میڈیا سے بات کرتے ہوئے واضح الفاظ میں کہہ دیا کہ اب امریکا اور اس کے اتحادی شام میں حکومت کا تختہ الٹنے کے لئے سرگرم نہیں ہیں۔

مزید جانئے: امریکی تاریخ میں پہلی بار خاتون جنرل کو ملٹری اکیڈمی کا سربراہ مقرر کردیا گیا

اس سے پہلے امریکا ہمیشہ کہتا رہا ہے کہ ”بشارالاسد کو جانا ہوگا۔“ بعد ازاں امریکا نے یہ موقف اپنا لیا کہ شام میں حکومت کا عبوری انتظام قائم ہونے تک بشارالاسد اقتدار میں رہ سکتے ہیں، اور اب امریکا نے یہ کہہ دیا ہے کہ بشارالاسد کی قسمت کا فیصلہ شامی قوم کرے گی۔ سیاسی تجزیہ کاروں کا کہنا ہے کہ امریکا کے موقف میں اس بڑی تبدیلی کے بعد کچھ نہیں کہا جاسکتا کہ بشارالاسد کب تک اقتدار میں رہیں گے۔

مزید : بین الاقوامی


loading...